Breaking News
Home / اہم ترین / احتجاجی مظاہروں کے دوران دھماکوں سے دہل اٹھا کابل ۔ 61 افراد ہلاک ، 200 سے زائد زخمی

احتجاجی مظاہروں کے دوران دھماکوں سے دہل اٹھا کابل ۔ 61 افراد ہلاک ، 200 سے زائد زخمی

افغانستان میں احتجاجی مظاہرے کے دوران ہونے والے 2 بم دھماکوں میں 61 افراد ہلاک جب کہ 200 سے زائد زخمی ہوگئے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان کے دارالحکومت کابل میں بجلی کے منصوبے میں ہزارہ برادری کے علاقوں کو نطر انداز کیے جانے کے خلاف ہزارہ برادری کے ہزاروں افراد احتجاج کررہے تھے کہ اچانک زور دار دھماکا ہوگیا جس سے مظاہرے میں بھگدڑ مچ گئی، اسی دوران دوسرا دھماکا بھی ہوا جس کے نیتجے میں اب تک 61 افراد ہلاک جب کہ 200 سے زائد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

ادھر افغان حکام نے 61 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ زخمیوں کو قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا ہیں جہاں کئی افراد کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے جب کہ تمام افراد کو طبی امداد دی جارہی ہیں۔

افغان وزارت داخلہ کے مطابق دھماکوں کے حوالے ابھی کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہوگا تاہم شواہد سے لگتا ہے کہ دھماکے خود کش تھے جبکہ مظاہرے میں عوام کی تعداد زیادہ ہونے کے باعث ہلاکتوں میں بھی مزید اضافے کے خدشہ ہے۔ دھماکوں کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم داعش نے قبول کرلی ہے۔

دوسری جانب پاکستانی  وزیراعظم نوازشریف نے بھی کابل دھماکوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کی تمام صورتوں کی مذمت کرتے ہیں جبکہ دکھ اورغم کی اس گھڑی میں افغانستان کے ساتھ کھڑے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کا کوئی مذہب نہیں یہ ہمارے مشترکہ دشمن ہیں ان کے خلاف آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کے لئے مشترکہ اور ٹھوس کوششیں کرنی ہوں گی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/AVUFJ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے