Breaking News
Home / اہم ترین / امریکہ میں ذہنی مریض6 سالہ بچے کے منہ سے نکلا لفظ اللہ تو ٹیچر نے دہشت گرد کہہ کرپولیس کو بلالیا

امریکہ میں ذہنی مریض6 سالہ بچے کے منہ سے نکلا لفظ اللہ تو ٹیچر نے دہشت گرد کہہ کرپولیس کو بلالیا

ٹیکساس (ایجنسی) 4 ڈسمبر  ۔ امریکہ کے ایک اسکول میں ڈاون سینڈروم بیماری سے متاثر ایک چھ سال کے طالب علم کے ذریعہ کلاس روم میں لفظ اللہ کہے جانے کے بعد ٹیچروں نے اس کو دہشت گرد سمجھ لیا اور پولیس بلالی ۔محمد سلیمان نام کے بچے کے والد کے مطابق ان کا بیٹا ڈاون سینڈروم مرض کے ساتھ پیدا ہوا تھا اور وہ ذہنی پریشانیوں کا شکار ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بچہ کے والد نے کہا ہے کہ ٹیکساس کے ہوسٹن سے تقریبا 20 میل دور پیر لینڈ میں واقع پرائمری اسکول میں ٹیچر نے اس کے بیٹے کے بارے میں پولیس کو بلالیا ۔ اسکول کی انتظامیہ نے الزام لگایا کہ محمد بول سکتا ہے۔انڈیپنڈنٹ کی خبر کے مطابق محمد کے والد نے اسکول کے الزامات کو یکسر خارج کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کا بیٹا بالکل بھی نہیں بولتا ہے اور اسے ذہنی پریشانیاں لاحق ہیں۔ بچے کے والد نے کہا کہ ان کا دعوی ہے کہ وہ دہشت گرد ہے ، یہ بے وقوفی ہے ، دراصل یہ بھید بھاو ہے ، یہ سو فیصد بھید بھاو ہے۔ادھر پیر لینڈ پولیس کا کہنا ہے کہ اس نے اپنی جانچ پوری کرلی ہے اور اسے کسی آئندہ کسی بھی کارروائی کی ضرورت محسوس ہوتی ہے ۔ جبکہ علاقہ کے چلڈرین سروس محکمہ کا کہنا ہے کہ جانچ جاری ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/oHpSE

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے