Breaking News
Home / اہم ترین / انجمن صد سالہ تقریبات کی افتتاحی نشست: میڈیکل کالج قائم کر کے بانیان کے خواب کو شر مندہ تعبیر کرنے مقررین کا مشورہ ۔ مہمانان نے انجمن کے ساتھ کیا نیک خواہشات کا اظہار

انجمن صد سالہ تقریبات کی افتتاحی نشست: میڈیکل کالج قائم کر کے بانیان کے خواب کو شر مندہ تعبیر کرنے مقررین کا مشورہ ۔ مہمانان نے انجمن کے ساتھ کیا نیک خواہشات کا اظہار

کئی اہم سیاسی و سماجی شخصیات کی شرکت۔  بھٹکلی عوام کا اتحادانجمن کی کامیابی کا راز: ڈیش پانڈے

انجن کا فارغ اور ایم ایل اے ہونے کی حیثیت سے انجمن کو ہر طرح کا تعاون دینے بھٹکل رکن اسمبلی  کا اعلان 

بھٹکل (ہر پل نیوز) 5 جنوری: قوموں کی ترقی اور تنزلی تعلیم پر ہی منحصر ہے، اور انجمن نے سماج کے ہر طبقے کو تعلیم سے سیراب کرتے ہوئے بھٹکل سمیت اطراف کے علاقوں کے لوگوں میں تعلیمی بیداری پیدا کی ہے۔ انجمن کو اسی پر اکتفا نہیں کرنا ہے بلکہ مزید نئے مراحل طئے کرتے ہوئے ا میڈیکل کالج قائم کرکے بانیان کے خواب کو شرمندہ تعبیر کرنا ہے۔ انجمن حامئی مسلمین بھٹکل کی صد سالہ اجلاس کی افتتاحی نشست میں خطاب کے دورا ن جامعہ اسلامیہ اشاعت العلوم اکل کُوا کے ناظم مولانا غلام محمد وستانوی نے ان خیالات کا اظہار کیا ۔ مولانا نےانجمن کی خدمات کی سراہنا کرتے ہوئے ذمہ داران کو مبارکباد دی ۔مہمان خصوصی کے طورپرتشریف فرما ضلع اُتر کنڑا کے انچارج وزیر آر وی دیش پانڈے نے کہا کہ انجمن پورے ضلع میں واحد ایسا ادارہ ہے جہاں ننھے بچوں کو تعلیم دینے کے ساتھ ساتھ ڈگری، انجینرنگ، بی بی اے ، بی ایڈ وغیرہ تک کی تعلیم دی جاتی ہے۔ انہوں نےکہا کہ انجمن نے بانیان نے یہ کام اس وقت کیا جب بھٹکل میں بالخصوص مسلم اقلیت میں تعلیم دینے کے بارے میں کوئی سوچ بھی نہیں سکتا تھا۔ انہوں نے بھٹکلی عوام کے اتحاد اور اتفاق کو انجمن کی ترقی اور کامیابی کا راز قرار دیا ۔دیش پانڈے نے انجمن کے ذمہ داران کو مشورہ دیا کہ وہ مستقبل کے انڈیا کو دھیان میں رکھ کر نئے کورسس متعارف کرائیں کہ نوجوان صرف تعلیم ہی حاصل نہ کرے بلکہ وہ ہر اعتبار سے ہنرمند بھی ثابت ہو۔ضلع جنوبی کینرا کے انچارج وزیر یوٹی عبدالقادر نےانجمن کو سوسال مکمل کرنے پر مبارکباد پیش کی اور کہا کہ انجمن کے فارغین دنیا کے کونے کونے میں پھیلے ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حقیقی ترقی یہ ہے کہ ہر بچہ تعلیم یافتہ ہو۔بھٹکل رکن اسمبلی سنیل نائک نے اس بات پر فخر کا اظہار کیا کہ جب انجمن اپنا صد سالہ جشن منارہا ہے تو ایسے وقت میں وہ بھٹکل کے رکن اسمبلی ہیں انہوں نےکہا کہ وہ خود بھی اسی انجمن سے فارغ ہیں اور انجمن کے لئے ابنائے انجمن کی حیثیت سے یا پھر ایم ایل اے ہونے کے ناطے ہر طرح کا تعاون دینے پیش کش کی۔ ریاستی وزیر تنویر سیٹھ نے بھی اس موقع پر اپنے تاثرات پیش کرتے ہوئے انجمن کو سوسال مکمل کرنے پر مبارکباد دی۔پروگرامیں انجمن میں 20 برسوں تک خدمات انجام دینے والوں کے ساتھ کئی ہونہار طلبا کی بھی تہنیت کی گئی۔انجمن کے صدر جناب عبدالرحیم جوکاکو نے پروگرام کی صدارت کی، جنرل سکریٹری صدیق اسماعیل نے انجمن کا تعارف پیش کیا۔ صدسالہ تقریب کے کنوینر عبدالرقیب ایم جے ندوی نے استقبال کیا،انجمن کے نومشق طلبہ نے نظامت کی۔ایڈیشنل سکریٹری اسحاق شاہ بندری شکریہ ادا کیا ۔ رسم ادا کی ۔ حُذیفہ یمان کی تلاوت اورحُسین قاضیا کی نعت خوانی کے بعد فرہاد علی نے انجمن کا ترانہ پیش کیا۔ پروگرام میں رویل اسپورٹس سینٹر کی جانب سے ٹھنڈے مشروب کا بہترین انتظام کیا گیا تھا، جبکہ آخر میں شرکاء کے لئے دوپہر کی ضیافت کا بہترین انتظام تھا۔

انجمن کے دیگر ذمہ داران سمیت بھٹکل جماعت المسلمین قاضی مولانا محمد اقبال مُلا ندوی، مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین قاضی مولانا خواجہ معین الدین اکرمی مدنی ، قومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح و تنظیم بھٹکل کے صدر ایڈوکیٹ مزمل قاضیا سمیت دیگر کافی ذمہ داران اسٹیج پر موجود تھے۔ مقامی میڈیا میں ساحل آن لائن ، بھٹکلیس داٹ کام ، بھٹکل نیوز، اور دیگر مقامی کیبل چینل نے اس پروگرام کو راست نشر کیا۔ رات میں رنگا رنگ ثقافتی پروگرامز پیش کئے جسے سامعین نےبے حد پسند کیا ۔ دونوں پروگراموں میں لوگوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/zNeAA

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے