Breaking News
Home / اہم ترین / اومابھارتی کا بابری مسجدپراشتعال انگیز بیان ۔ کہا رام مندر کے لئے پھانسی پر چڑھنے کو تیار

اومابھارتی کا بابری مسجدپراشتعال انگیز بیان ۔ کہا رام مندر کے لئے پھانسی پر چڑھنے کو تیار

لکھنؤ(ہرپل نیوز/ایجنسی)،8اپریل:بابری مسجدپرسبرامنیم سوامی کے ساتھ ساتھ بی جے پی لیڈروں کی اشتعال انگیزیوں کاسلسلہ جاری ہے ۔اورکورٹ کے مشورہ کامطلب یہ نکالاجارہاہے کہ عدالت نے باہرمعاملہ حل کرنے کوکہاہے تواب مندرہی واحدمتبادل ہے ۔ایساتاثردینے کی کوشش کی جارہی ہے اورزورزبردستی تک کی بات کہی جارہی ہے۔ آبی وسائل کی مرکزی وزیر اومابھارتی نے کہا کہ ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کسی ایک ریاست کا معاملہ نہیں ہے۔یہ پورے ملک کی’ آستھا‘ کا موضوع ہے۔واضح ہوکہ اومابھارتی بابری مسجدکی شہادت کی ملزموں میں سے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایودھیا میں رام کے خوبصورت مندر کی تعمیر کا خواب ہے۔رام مندر کے لئے انہیں جیل جانا پڑے یا پھانسی چڑھ بھی قبول ہے۔انہوں نے دارالحکومت میں کہا کہ یہ معاملہ سپریم کورٹ میں ہے اورسپریم کورٹ نے بھی مانا ہے کہ اس نوعیت ایسی ہے کہ اس کا حل عدالت سے باہر ہونا چاہئے۔تمام فریقوں کو رام مندرکی تعمیر کے لئے حل نکالنا چاہئے۔ظاہرہے کہ سپریم کورٹ کی ہدایت کایہ مطلب نہیں ہے کہ مفاہمت کے بہانہ رام مندرپراڑیل رویہ اپنایاجائے پھرباہمی مفاہمت اورفریقین کے درمیان مصالحت کاکیامعنیٰ رہ جائے گا۔مرکزی وزیر نے اس کے ساتھ ہی پچھلی حکومتوں پر گنگا کے نام پر فریب کرنے کا الزام لگایا۔انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کی انتھک کوششوں کے باوجودگزشتہ اکھلیش حکومت نے این او سی نہیں دیے اور گنگا کی صفائی کی مہم میں رکاوٹ پیداکی تھی۔انہوں نے کہا کہ اب ریاست میں یوگی آدتیہ ناتھ وزیراعلیٰ بنے ہیں۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/dGEKt

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے