Breaking News
Home / اہم ترین / ایس ایس ایل سی کے امتحان کے طریقہ کار کو لیکر پریشانی۔ابھی طئے نہیں ہوا کہ کس طریقے سے امتحان لیا جائے؟

ایس ایس ایل سی کے امتحان کے طریقہ کار کو لیکر پریشانی۔ابھی طئے نہیں ہوا کہ کس طریقے سے امتحان لیا جائے؟

بنگلورہرپل نیوز،ایجنسی)3مارچ: ایس ایس ایل سی امتحانات کے طریقہ کار کو لیکر ہائی کورٹ میں چل رہی بحث کے پیش نظرہائی اسکول اگزامنیشن بورڈ عجیب کشمکش میں الجھ کر رہ گیا ہے۔ ایک جانب ایگزامنیشن بورڈ ابھی تک یہ طئے نہیں کرپارہا ہے کہ آخر کس طریقے کارسے امتحانات لئے جائیں، تودوسری طرف 30؍مارچ سے ہی ایس ایس ایل سی امتحانات شروع ہونے جارہے ہیں ۔جس کیلئے محکمہ کی جانب سے نئے طریقے کار میں تمام تیاریوں کو مکمل کیا جاچکا ہے۔ امتحانات کے سوالیہ و جوابی پرچوں کی پرنٹنگ کیلئے ٹینڈر کی کارروائی پر بھی عمل درآمد کرتے ہوئے عنقریب ہی پرچوں کو پرنٹنگ کیلئے منظوری بھی دی جاچکی ہے اوران حالات میں والدین اس نئے طریقے کار میں امتحانات نہ لئے جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے ہائی کورٹ میں اپیل دائر کی ہے۔ نئے طریقہ کار سے امتحانات منعقد کرنے پر ریاستی حکومت کی جانب سے بھی محکمہ کو منظوری مل چکی ہے۔ ان حالات میں محکمہ کیلئے دوبارہ تبدیلی لانا مشکل کام ثابت ہوگا ۔ اسلئے محکمہ نے وضاحت دی ہے کہ اس نئے طریقہ کار سے امتحانات منعقدہ کرنے کی اجازت دی جائے اسمیں طلباء کا فائدہ ہی پہنچے گا انہیں کسی طرح کا نقصان نہیں ہوگا۔ محکمہ نے مزید بتایا کہ ایس ایس ایل سی طلباء کو قبل از وقت تبدیلی کے تعلق واقف کروایا گیا تھااور انہیں نئے امتحانی نمونے کی تربیت بھی دی جاچکی ہے ۔ یہ احکامات ہمیں 6؍ دسمبر کو ہی موصول ہوئے ہیں اور نئے طریقے کے مطابق ہی پری پیٹری امتحانات منعقد کئے گئے تھے جس میں کسی طرح کی دقت درپیش نہیں ہوئی۔اس تعلق سے بات کرتے ہوئے محکمہ سکینڈری ایجوکیشن بورڈکے افسروں نے بتایا کہ اس نئے طریقے کار سے بچوں کا کوئی نقصان نہیں گا۔بلکہ امتحانات کے بعد طلباء اپنے سوالیہ پرچے کو گھر لے جاسکیں گے اور انکی کارگردگی کا معائنہ بھی کرسکیں گے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/fkW8U

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے