Breaking News
Home / اہم ترین / بھٹکل میں مرکز السنۃ اہل حدیث کی جانب سے خواتین کے حقوق کا پروگرام

بھٹکل میں مرکز السنۃ اہل حدیث کی جانب سے خواتین کے حقوق کا پروگرام

بھٹکل ( ہرپل نیوز)  6؍نومبر : بھٹکل  میں  مرکز السنہ اہل  حدیث کی جانب سے سول کوڈ  کی مخالفت اور خواتین کے حقوق کے متعلق ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا ۔    بھٹکل کے ایک نجی ہوٹل   میں  خواص کے مخصوص مجمع سے   خطاب کرتے ہوئے پیس ٹی اردو کے معروف مقرر مولانا ثنا ء اللہ مدنی نے مسلم پرسنل لاء اور عائلی مسائل پر تفصیلی خطاب کیا ۔ اپنے خطاب میں انہوں نے  حالیہ دنوں پرسنل لاء کے سلسلے میں حکومتی مداخلت پر سخت اعتراض جتاتے  ہوئے     کہا کہ   پرسنل  لاء میں کسی کی مداخلت برداشت نہیں کی جائے گی ۔ انہوں نے اپنے خطاب میں واضح کیا   کہ شریعت  اللہ کی طرف سے نازل کردہ ہے اس میں ہم کسی طرح کی مداخلت قطعا برداشت نہیں کریں گے ۔   ثنا اللہ مدنی  نے  پرسنل لاء میں حکومت کی مداخلت  اور عورتوں کے تئیں وزیر اعظم کے ظاہری دکھ درد کو  تنقید کر کے گجرات فسادات  کے دوران عورتوں کی   عصمت دری کے واقعات کا حوالہ دے کر مودی کوآڑے ہاتھوں لیا ۔ مولانا نے اس موقع پر آخری وقت تک مسلم پر سنل لاء کا ساتھ دینے کی بات کہی۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے سب کا ساتح سب کا وکاس کا جو نعرہ دیا تھا اس سے ان کو کوئی اختلاف نہیں ہے ، اننہوں نے یہ بھی کہا کہ   بھارت دیش کی ایسی ترقی جس میں انسانیت کا نقصان نہ ہو اور ایسے تمام ڈیولیپمنٹ جس میں  مسلمانوں کا آخرت میں کوئی گھاٹا نہ ہو   تو وہ ایسے میں حکومت کے ساتھ میں ہیں اور انہیں اس سے کوئی بیر نہیں ہے ۔لیکن حکومت پرسنل لاء میں مداخلت کرے گی تو اسے مسلمان برداشت نہیں کرے گا ۔    خواتین کے حقوق کو موضوع بنا کر منعقد کئے گئے اس پروگرام میں  خواتین کی عدم موجودگی کے  میڈیا کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے منتظمین  نے  کہا کہ بعض وجوہات کی بنیاد پر خواتین کو شامل نہیں کیا گیا  ہے ۔  اس پروگرام میں آس پاس کے علاقوں  کے کافی لوگ موجود تھے ۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/7XXdk

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے