Breaking News
Home / اہم ترین / تاج محل کے ارد گرد پارکنگ تاریخی ورثہ کے لئے خطرناک۔ چار ہفتہ میں پارکنگ منہدم کرنے کا فرمان۔ سماعت کے دوران سپریم کورٹ یوپی حکومت پر بر ہم

تاج محل کے ارد گرد پارکنگ تاریخی ورثہ کے لئے خطرناک۔ چار ہفتہ میں پارکنگ منہدم کرنے کا فرمان۔ سماعت کے دوران سپریم کورٹ یوپی حکومت پر بر ہم

نئی دہلی (ہرپل نیوز، ایجنسی)25 اکتوبر۔ سپریم کورٹ نے تاج محل کے ارد گرد بننے والی پارکنگ کو ہٹانے کا آج اتر پردیش کی حکومت کو حکم دیا۔ جسٹس مدن بی لوكر اور جسٹس دیپک گپتا کی بینچ نے تاج محل کے ارد گرد پارکنگ کو اس تاریخی ورثہ کے لئے خطرناک قرار دیتے ہوئے تمام پارکنگ کو چار ہفتوں کے اندر ہٹانے کے احکامات دیئے ہیں۔سماعت کے دوران آج اتر پردیش کی حکومت کی طرف سے کوئی بھی پیش نہیں ہوا، جس کے سبب عدالت عظمی نے ناراضگی ظاہر کی اور سیاحت محکمہ کی عرضی ہی مسترد کر دی۔ سماعت کے دوران ایم سی مہتا نے عدالت کو بتایا کہ پارکنگ کی تعمیر شروع ہو گئی ہے اور ابھی اس کے لئے ماحولیاتی منظوری نہیں لی گئی ہے۔خصوصی بینچ نے کہا کہ تعمیر سے پہلے ماحولیاتی منظوری اور سی ای سی کی منظوری ہونی چاہئے۔ عدالت نے اس کے ساتھ ہی عرضی مسترد کرتے ہوئے بننے والی پارکنگ کو چار ہفتے میں منہدم کرنے کا فرمان سنا دیا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/veXR1

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے