Breaking News
Home / اہم ترین / تال میل کی کمی سے سرکاری زمینات پر قبضہ ہوتاہے: جئے چندرا

تال میل کی کمی سے سرکاری زمینات پر قبضہ ہوتاہے: جئے چندرا

بنگلورو22؍اگست(ہرپل نیوز) سرکاری زمین ، تالابوں اور نالوں پر غیر قانونی قبضوں کیلئے بلدی اداروں اور سرکاری محکمۂ پلاننگ کے درمیان رابطہ کا فقدان اہم وجہ ہے۔ حکومت کو فوری طور پر اس کمی کو دور کرنے کی طرف متوجہ ہونا چاہئے۔ یہ بات آج ریاستی وزیر برائے قانونی امورٹی بی جئے چندرا نے کہی۔ شہر کے کبن پارک میں منعقدہ تقریب کا افتتاح کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ بلدی اداروں کے محکمۂ ریوینیو سروے کی طرف سے زمینات کے ریکارڈس اور دیگر دستاویزات دیگر سرکاری محکموں کو ٹھیک طرح سے مہیا کرائے نہیں جاتے۔ان کی طرف سے جو بھی دستاویز ملتی ہے اسی کی بنیاد پر پلاننگ اتھارٹیز اپنے لے آؤٹ ترتیب دیتی ہیں۔ رابطہ کی اس کمی کو دور کرنے کی طرف بلدی اداروں اور محکمۂ پلاننگ کے افسران کو توجہ دینی چاہئے۔ بنگلور میں بڑے نالوں پر غیر قانونی قبضوں کو ہٹانے بی بی ایم پی اور بی ایم ٹی ایف کی طرف سے جاری انہدامی مہم پر عوامی مزاحمت کے متعلق مسٹر جئے چندرا نے کہاکہ برسوں سے آباد گھروں کو اچانک اگر توڑ دیا جائے تو عوام کی طرف سے مزاحمت کا سامنا کرنا پڑے گا، لیکن حکومت کی طرف سے جو کارروائی کی جارہی ہے وہ غیر قانونی قبضوں کو ہٹانے کیلئے ہے ، ان قبضوں کو ہٹانے کے ساتھ آنے والے دنوں میں ایجنسیوں کی طرف سے تالابوں ، نالوں اور سرکاری زمینات کے صحیح نقشے تیار رکھنے کی بھی ضرورت ہے ،تاکہ سرکاری املاک پر غیر قانونی قبضوں کو ہونے سے پہلے ہی روکا جاسکے۔اس موقع پر ٹاؤن پلاننگ ڈائرکٹر اے وی رنگیش ، بی ڈی اے ڈائرکٹر اعجاز احمد ، اڈیشنل ڈائرکٹر ششی کمار اور دیگر موجود تھے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/u8RUh

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے