Breaking News
Home / اہم ترین / جامعہ اسلامیہ بھٹکل میں انوکھے طرزکا نعتیہ مظاہرہ۔ملکی اورغیرملکی سولہ زبانوں میں طلبائے جامعہ نے پیش کیں نعتیں

جامعہ اسلامیہ بھٹکل میں انوکھے طرزکا نعتیہ مظاہرہ۔ملکی اورغیرملکی سولہ زبانوں میں طلبائے جامعہ نے پیش کیں نعتیں

بھٹکل (ہرپل نیوزپریس ریلیز)14ڈسمبر:عشق نبوی کا کچھ نہ کچھ حصہ ہمارے دلوں میں ہونا چاہئے، محبت رسول کی جوت ہر ایک کے دل میں جگ جائے اور ہر ایک کا دل اس سے سرشار ہوجائے، ان خیالات کا کا اظہار استاد حدیث دارالعلوم ندوۃ العلماء مولانا عمیس صاحب ندوی دامت برکاتہم نے جامعہ اسلامیہ بھٹکل میں ربیع الاول کی مناسبت سے منعقد نعتیہ مظاہرہ میں اپنے خطاب کے دوران کیا، مولانا نے نعتیہ محفل کے تعلق سے اپنی خوشی کاا ظہار فرماتے ہوئے نعت کی ابتدا اور اس کے عروج پر مختصراً روشنی ڈالی،مولانا نے مزید کہا کہ نعت کسی بھی زبان میں ہو عاشق رسول اگر چہ کہ اس کو سمجھتے نہیں مگر اسے سن کر جھوم اٹھتے ہیں۔دفترعلاقات عامہ جامعہ اسلامیہ بھٹکل سے جاری پریس بریف کے مطابق صدر جلسہ و نائب صدر جامعہ اسلامیہ مولانا اقبال صاحب ملا ندوی نے طلبہ کی محنتوں کو سراہتے ہوئے رسول اللہ ﷺ سے اپنا تعلق مضبوط کرنے کی تلقین کی اور فرمایا کہ محبت میں اصل شئی نسبت ہے، مولانا نے قصیدہ بردہ کے تعلق سے ایک آنکھوں دیکھا واقعہ سامعین کے گوش گذار کیا جو رسول اللہ ﷺ سے نسبت کی دلیل تھا۔سابق صدر شعبہ حفظ جامعہ اسلامیہ بھٹکل جناب حافظ کبیر الدین صاحب نے اپنا بہترین کلام نسبت رسول کے تعلق سے پیش کیا جس نے سامعین کے دلوں کو مسرور کردیا۔واضح رہے کہ محفل نعت رسول ﷺ مختلف ریاستی و علاقائی زبانوں (اردو، عربی، نوائطی، انگریزی، فارسی، دکنی، کنڑی، کوکنی، مراٹھی، پنجابی، بیری، ملیالم، ہندی، تیلگو،جاپانی)وغیرہ میں طلبہ جامعہ نے نعتیں پیش کیں جس میں 23 طلبہ نے 16 زبانوں میں آں حضور ﷺ کی دح سرائی کی۔ اپروگرام کا آغاز شیبان گنگولی کی تلاوت اور نوید احمد کی حمد سے ہوا، مولانا عمیس صاحب کے فرزند عبداللہ نے اپنی سریلی آواز میں ایک نظم پیش کی،اور نظامت کے فرائض انعام کولا اور رحمت اللہ نے بحسن و خوبی انجام دئے، قریب پونے بارہ بجے حافظ کبیلدین کی دعا پرپروگرام ختم ہوا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/yBl2D

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے