Breaking News
Home / اہم ترین / جسٹس نائک کو لوک آیوکتہ بنانے کی تجویز دوبارہ مسترد گورنر کے اقدام سے ریاستی حکومت کو جھٹکا(مزید خبریں)

جسٹس نائک کو لوک آیوکتہ بنانے کی تجویز دوبارہ مسترد گورنر کے اقدام سے ریاستی حکومت کو جھٹکا(مزید خبریں)

بنگلورو۔27؍مئی(ہرپل نیوز) ریاستی کانگریس حکومت کو آج لوک آیوکتہ کے تقرر kar_govrکے معاملے پر ایک اور زبردست جھٹکا اس وقت لگا جب گورنر واجو بھائی والا نے جسٹس ایس آر نائک کو لوک آیوکتہ بنانے کے متعلق ریاستی حکومت کی سفارش کو دوسری مرتبہ مسترد کردیا۔ گورنر کے اس فیصلے سے جسٹس نائک کو لوک آیوکتہ بنانے کے سلسلے میںحکومت نے جو موقف اپنایا تھا اس پر اسے منہ کی کھانی پڑی ہے۔ مقامی اور کنڑیگا ہونے کے ناطے حکومت نے جسٹس ایس آر نائک کے نام کی سفارش کی تھی، تاہم گورنر نے حکومت کی طرف سے اس استدلال کو مسترد کرتے ہوئے اپنی شدید ناراضگی کے ساتھ حکومت کے سفارش نامہ کوواپس لوٹا دیا ہے۔ گورنر نے اپنے پیغام میں حکومت سے یہ واضح طور پر کہا ہے کہ لوک آیوکتہ کے عہدہ کیلئے جسٹس ایس آر نائک کے تقرر کو وہ اس لئے منظوری نہیں دے سکتے کہ ان پر مختلف حلقوں سے اعتراضات کئے جارہے ہیں۔ جسٹس ایس آر نائک کے تقرر سے انکار سے پہلے بھی گورنر نے کئی امور پر ریاستی حکومت کی سفارشات کو ٹھکرادیا ہے۔ حکومت اور راج بھون کے درمیان اس وجہ سے ٹکراؤ کی صورتحال بارہا پیدا ہوئی ہے، کے پی ایس سی چیرمین کے عہدہ پر وی آر سدرشن کا تقرر ہویا پھر دیگر سیاسی تقررات کو منظوری دینے میں گورنر کا سخت رویہ اس وجہ سے حکمران پارٹی گورنر کے موقف سے کافی ناراض ہے۔ ریاست میں دیہی یونیورسٹی قائم کرنے کے سلسلے میں بھی حکومت نے جو آرڈی ننس حال ہی میں جاری کیا تھا گورنر نے اسے بھی منظوری دینے سے صاف انکار کردیا ۔ لوک آیوکتہ کے تقرر کے سلسلے میں اس سے پہلے جب اسمبلی اسپیکر کاگوڈ تمپا کی صدارت میں اپوزیشن لیڈران جگدیش شٹر اور ایشورپا کے ساتھ میٹنگ ہوئی اس میں بھی وزیراعلیٰ سدرامیا نے جسٹس ایس آر نائک کا نام تجویز کیاتھا، لیکن اس کی شدید مخالفت کرتے ہوئے سابق چیف جسٹس وکرم جیت سین کو مقر ر کرنے کا مطالبہ کیا گیاتھا، اور بتایا گیاتھاکہ جسٹس ایس آر نائک پر متعدد الزامات ہیں اسی لئے ان کا تقرر نہ کیا جائے ۔ لیکن وزیراعلیٰ سدرامیا جسٹس نائک کے نام پر ہی بضد رہے اور یہی نام گورنر کو روانہ کیا گیا۔ گورنر نے اب دو مرتبہ جسٹس نائک کو لوک آیوکتہ کے طور پر مقرر کرنے سے انکار کردیا ہے، جس کے ساتھ ہی ان کا لوک آیوکتہ بننا اب تقریباً ناممکن ہے۔ گورنر نے اپنے تازہ مکتوب میں حکومت سے کہا ہے کہ لوک آیوکتہ کے عہدہ کیلئے کسی اور جج کا نام تجویز کیا جائے، جائزہ لینے کے بعد اسے منظوری دی جاسکتی ہے۔اس دوران کے پی ایس سی چیرمین کے عہدہ کیلئے بھی حکومت نے بی ڈی اے کمشنر شام بھٹ کا نام منظوری کیلئے روانہ کیاہے، اس تجویز پر بھی مختلف حلقوں سے اعتراضات کو دیکھتے ہوئے یہ خدشات ظاہر کئے جارہے ہیں کہ کہیں اس نام کو بھی گورنر منظوری دینے سے انکار نہ کردیں۔ شام بھٹ پر جو الزامات ہیں اس کے متعلق گورنر نے لوک آیوکتہ کے رجسٹرار کو ایک مکتوب لکھ کر تفصیلات طلب کی ہیں، ان تفصیلات کے ملنے کے بعد دیکھنا ہے کہ گورنر کیا موقف اپناتے ہیں۔

سی ای ٹی امتحان کے نتائج کا کل ہوگا اعلان
بنگلورو۔27؍مئی(ہرپلنیوز) پروفیشنل کالجوں میں داخلے کیلئے امسال کروائے گے سی ای ٹی امتحان کے نتائج کا کل اعلان کردیا جائے گا۔میڈیکل ، انجینئرنگ ، ڈینٹل ودیگر پروفیشنل کورسوں میں داخلوں کیلئے اس امتحان کے ذریعہ ہی طلبا کو مختلف کالجوں میں نشستوں کی دستیابی یقینی بنائی جاتی ہے۔ حال ہی میں سپریم کورٹ کی طرف سے میڈیکل کورسوں میں داخلے کیلئے ملک گیر پیمانے پرنیٹ امتحان کروانے کی ہدایت کے پیش نظر طلبا اور والدین کو کافی پریشانی کا سامنا ہورہاتھا، گزشتہ روز ہی مرکزی حکومت کی طرف سے نیٹ امتحان کے لزوم کو اس سال ترک کرتے ہوئے آرڈی ننس جاری کیا گیا، جس سے طلبا اور والدین کو راحت کی سانس لینے کا موقع میسر آیا ہے۔ اب سی ای ٹی رینکنگ کی بنیاد پر ہی میڈیکل کورسوں میں داخلے بھی ممکن ہوسکیں گے۔ کل صبح گیارہ بجے سے کرناٹکا ایگزا منیشن اتھارٹی کی ویب سائٹ پر سی ای ٹی نتائج کااعلان کردیا جائے گا۔وزیر برائے اعلیٰ تعلیمات ٹی بی جئے چندرا ، کرناٹکا ایگزامنیشن اتھارٹی میں سی ای ٹی نتائج کا رسمی اعلان کریں گے۔

بی بی ایم پی کیلئے تین مسلمانوں سمیت 22کارپوریٹر نامزد

بنگلورو۔27؍مئی(ہرپل نیوز) برہت بنگلور مہانگر پالیکے کیلئے تین مسلم نمائندوں سمیت 22کارپوریٹرس نامزد کئے گئے ہیں ان میں لکشمی ہری ، ایس اشوک ریڈی، بی موہن کمار، ایچ ایس سدے گوڈا، پی جی انتونی سوامی، جی وی سریش ، بی اے کرشنا مورتی، جے ولیمس ، اے بی عبدالقادر، ایس ایم مرگا ، آنندکمار اے آر، بائرپا ایس ایم، کرشنا مورتی ، رادھا وینکٹیش، وی کرشنا م ورتی، سنیل کمار، ایس جئے رام، آر موہن کمار، ہدایت اﷲ اور سید مجاہدشامل ہیں۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/Kg0C6

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے