Breaking News
Home / اہم ترین / جیل میں بند مسلم نوجوان مصطفی کی ہلاکت کا معاملہ: بھٹکل میں پاپولر فرنٹ آف انڈیا کا احتجاج

جیل میں بند مسلم نوجوان مصطفی کی ہلاکت کا معاملہ: بھٹکل میں پاپولر فرنٹ آف انڈیا کا احتجاج

منگلورو (ہرپل نیوز) 12؍ نومبر۔بجرنگ دل لیڈر پرشانت پجاری کے قتل کے الزام میں گزشتہ سال سے میسور سنٹرل جیل میں قیدمصطفےٰ کوور کا چھرا گھونپ کر قتل کردیا گیاہے۔موصولہ رپورٹ کے مطابق زیر سماعت قیدی مصطفےٰ کوور پر جان لیوا حملہ ایک اور زیرسماعت قیدی کرن شیٹی نے کیا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ کرن شیٹی بھی منگلورو کا ہی رہنے والا ہے اور مصطفےٰ کے ساتھ اس کی کوئی ان بن ہوگئی تھی۔مگر اس قاتلانہ حملے کی اصل وجہ ابھی تک معلوم نہیں ہوسکی ہے۔ کرن شیٹی کی طرف سے چھرا گھونپنے کے بعد جیل کے افسران نے بہت زیادہ زخمی مصطفےٰ کوور کو اسپتال منتقل کیا مگر حد سے زیادہ خون بہہ جانے سے اس کی موت واقع ہوگئی۔اس معاملے میں منڈی پولیس اسٹیشن میں کیس درج کیا گیا ہے اور پولیس کی طرف سے تحقیقات شروع ہوئی ہے۔

ادھرمنگلورو میں مصطفی کی تدفین عمل میں آئی جس میں نوجوان کی کثیر تعداد میں شریک تھے .مصطفی کو پی ایف ائی کے جھنڈے میں لپیٹ کر تدفین کی گئی.

جیل میں بند مسلم قیدیوں کے اوپر جان لیوا حملے میں اضافے کے ساتھ عوام میں تشویش بڑھتی جا رہی ہے گزشتہ دنوں بھوپال انکاؤنٹر کے واقعہ کے بعد یہ نیا واقعہ میسور میں پیش آیا جس میں جیل میں بند ایک مسلم نوجوان ایک اور قیدی کی جانب سے جان لیوا حملے کے بعد جانبر نہیں ہوسکا. اس معاملے کو لیکر بھٹکل میں پاپولر فرنٹ آف انڈیا نے احتجاج کرتے ہوئے پولیس کو ایک یادداشت پیش کی جس میں اس واقعہ میں ملوث قیدی کو سزائے موت دینے کی مانگ کی گئی.اس موقع پر پولیس اسٹیشن میں منظم ایک احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے پولیس کے کردار پر بھی سوالات اٹھائے.اس موقع پر پی ایف آئی کے کئی مقامی ذمہ داران موجود تھے.

The short URL of the present article is: http://harpal.in/4FRsf

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے