Breaking News
Home / اہم ترین / خواتین قلمکاروں کی تنظیم ’’بزم غزالاں‘‘ نے عالمی یوم خواتین کے موقع سے بیدر کی ان خواتین کو تہنیت پیش 

خواتین قلمکاروں کی تنظیم ’’بزم غزالاں‘‘ نے عالمی یوم خواتین کے موقع سے بیدر کی ان خواتین کو تہنیت پیش 

بیدر۔(ہرپل نیوز،محمد امین نواز)21؍مارچ۔ضلع بیدر کی خواتین قلمکاروں کی تنظیم ’’بزم غزالاں‘‘ نے عالمی یوم خواتین کے موقع سے بیدر کی ان خواتین کو تہنیت پیش کرنے کا آغاز کیاہے جو کسی نہ کسی شعبہ میں نمایاں کارکردگی کامظاہرہ کررہی ہیں۔ اس ضمن میں ایک نشست مسیح الدین احمد قریشیہ الماس میموریل ہال تعلیم صدیق شاہ بیدر میں محترمہ اقبال النساء کی زیر صدارت منعقد ہوئی۔ نشست کا آغاز صبیحہ خانم کی تلاوت کلام پاک سے ہوا۔ معراج بیگم نے ہدیہ نعت پیش کیا۔ رخسانہ نازنین سکریڑی بزم غزالاں نے اپنے خصوصی خطاب میں کہاکہ باصلاحیت خواتین کو تہنیت پیش کرنے کے سلسلہ میں ہنرمند خواتین کو ترجیح دی ہے کہ ان کی محنت ، لگن ، جستجو کا اعتراف کرنا ضروری ہے ۔ اکثر اس کو نظر انداز کیاجاتاہے۔ یہ خواتین خاموشی کے ساتھ اپنی زندگی کے مصائب کاسامناکرتی ہیں ۔اور اپنے فرائض کی انجام دہی اپنے ہنرکے بل بوتے پر کرتی ہیں ۔ ان خواتین کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے ہمیں فخر محسوس ہورہاہے۔ اور عورت ہونے کے ناطے ان خواتین کی ہمت اور حوصلہ ہمارے لئے قابل تقلیدہے‘‘محترمہ پریملا بائی اور محترمہ شہناز بیگم کو بزم غزالاں کی جانب سے تہنیت پیش کی گئی۔ محترمہ پریملا بائی بیوہ اور تین بیٹیوں کاواحد سہار اہیں، ٹیلرنگ کاکام کرتے ہوئے اپنی بیٹیوں کیلئے دنیا میں جنت بنانے کاخواب دیکھ رکھاہے۔ جبکہ شہناز بیگم ایم اے بی ایڈ ہونے کے باوجود ملازمت کے حصول میں ناکام رہیں ۔ سلائی کڑھائی کاشو ق بچپن سے رہا۔ تاہم پولیو میں ایک پیر مفلوج ہونے سے بھی وہ مسائل کاشکار رہیں۔ محترمہ اقبال النساء کے ہاتھوں ان دونوں خواتین کی شالپوشی اور گلپوشی کی گئی۔ وفورمسرت سے دونوں آبدیدہ ہوگئیں اور اپنے جذبات تشکر کو پیش کیا۔ پریملابائی نے کہاکہ زندگی میں خوداعتمادی اور خودداری بے حد ضروری ہے ۔ ان کے سہارے عزت کی زندگی گزار سکتے ہیں۔ شہنازبیگم نے کہاکہ میں آپ تمام کی ممنون ہوں ۔ اللہ تعالیٰ سے کوئی شکویٰ نہیں ہے۔ جو بھی حالات ہیں لیکن اس نے عزت دی ہے۔ میں آئندہ زندگی بھی عزت سے گزارنے کی متمنی ہوں‘‘محترمہ ارم فاطمہ نائب صدر بزم غزالاں نے مہمانان کو مبارک باد پیش کی۔ اس تہنیت کے بعد معمول کے مطابق نثری تخلیقات پیش کی گئیں ۔ محترمہ شاہین فاطمہ نے ’’یوم خواتین‘‘ عنوان سے مضمون پیش کیا۔ اقبال النساء نے منظوم کہانی ایک لڑکی کی سنائی ۔ مستقیم بیگم نے نظم ’’بنت حوا‘‘ منتخب ترنم سے سناکر سماں باندھ دیا۔ رخسانہ نازنین نے افسانہ ’’سودوزیاں‘‘ پیش کیا۔ شاہین بیگم کے اظہار تشکر اور مستقیم بیگم کی رقت آمیز دعا پر نشست کااختتام ہوا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/fTViW

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے