Breaking News
Home / اہم ترین / راہل گاندھی کا مودی پر بڑا حملہ ، میرے پاس وزیر اعظم کی بدعنوانی کے سلسلہ میں اہم معلومات

راہل گاندھی کا مودی پر بڑا حملہ ، میرے پاس وزیر اعظم کی بدعنوانی کے سلسلہ میں اہم معلومات

نئی دہلی ( ہرپل نیوز)14ڈسمبر : کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی نے بدھ کو وزیر اعظم مودی پر بڑا حملہ کرتے ہوئے دعوی کیا کہ ان کے پاس وزیر اعظم مودی کے بدعنوانی کی معلومات ہے، جسے انہیں ایوان میں رکھنے نہیں دیا جا رہا ہے۔ اپوزیشن کی مشترکہ پریس کانفرنس میں راہل نے کہا کہ 'یہ ایسی معلومات ہیں ، جس سے وزیر اعظم کا بیلون پھٹ جائے گا۔ قبل ازیں لوک سبھا میں نوٹ بندي اور کرن رجیجو کے معاملہ پر ہنگامے کے سبب لوک سبھا کی کارروائی کو جمعرات تک کے لئے ملتوی کر دیا گیا۔چار دن کے وقفہ کے بعد بدھ کو پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس کی کارروائی ہنگامہ آرائی کے ساتھ ہی شروع ہوئی۔ لوک سبھا کی کارروائی شروع ہوتے ہی اپوزیشن نے مرکزی وزیر داخلہ کرن رجیجو پر بدعنوانی کے مبینہ الزامات اور نوٹ بندي کے معاملہ پر ہنگامہ کیا ۔ وزیر اعظم مودی کی موجودگی میں ہنگامہ آرائی کے بعد ایوان کی کارروائی کو 12 بجے تک ملتوی کر دیا گیا۔ تاہم جب دوبارہ کارروائی شروع ہوئی ، تب بھی یہ ہنگامہ جاری رہا۔ لگاتار ہنگامہ آرائی کے پیش نظر ایوان کی کارروائی جمعرات تک کے لئے ملتوی کر دی گئی۔کارروائی ملتوی ہونے کے بعد اپوزیشن کی مشترکہ پریس کانفرنس میں کانگریس نائب صدر راہل گاندھی نے کہا کہ انہیں لوک سبھا میں بولنے نہیں دیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ ایک ماہ سے پورا اپوزیشن لوک سبھا میں بحث چاہتا ہے، مگر وزیر اعظم اور حکومت نہیں چاہتی۔ کانگریس کے نائب صدر نے مودی پر بڑا حملہ کرتے ہوئے کہا کہ 'وزیر اعظم ڈرے ہوئے ہیں، ان کی بدعنوانی کے ہمارے پاس کچھ ذاتی معلومات ہیں ، جسے ہم ایوان میں رکھنا چاہتے ہیں، ان معلومات سے وزیر اعظم بیلون پھوٹ جائے گا، اس لئے ہمیں بولنے نہیں دیا جا رہا۔راہل گاندھی نے کہا کہ وزیر اعظم سے پورا ملک صفائی چاہتا ہے، انہیں ہمیں بولنے دینا ہوگا، وزیر اعظم بہانہ بنانا بند کریں، ہم سب کو بولنے کا وقت دیجئے، وزیر اعظم خوفزدہ ہیں، کبھی جلسہ عام میں جاتے ہیں، کبھی پوپ کنسرٹ میں جاتے ہیں ، لیکن پارلیمنٹ نہیں آتے۔ تاریخ میں پہلی مرتبہ حکومت بحث کے لئے روک رہی ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/JWq8j

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے