Breaking News
Home / اہم ترین / روحانیت کامرکز فسطائیوں کے نشانے پر۔سادھوی پراچی نے دارالعلوم دیوبند کودہشت گردوں کی پناہ گاہ بتایا

روحانیت کامرکز فسطائیوں کے نشانے پر۔سادھوی پراچی نے دارالعلوم دیوبند کودہشت گردوں کی پناہ گاہ بتایا

باغپت ( ہرپل نیوز، ایجنسی)3نومبر۔باغپت: متنازعہ بیانات کو لے کر اکثر سرخیوں میں رہنے والی سادھوی پراچی کا ایک بار پھر متنازعہ بیان آیا ہے۔ باغپت پہنچی سادھوی پراچی نے ایک خاص کمیونٹی کو جم کر نشانہ بنایا۔ سادھوی نے کہا کہ 'دہشت گرد اسلام مذہب سے آتے ہیں اور دارالعلوم دیوبند ادارے دہشت گردوں کی پناہ گاہ ہے۔ سادھوی نے کہا کہ 'مسلم ہی دہشت گرد ہوتے ہیں

سادھوی پراچی نے کہا کہ دہشت گرد مسلم ہوتاہے۔ ہندوؤں کو تو صرف بدنام کیا جاتا ہے۔وہیں، دیوبند میں پاسپورٹ کی دوبارہ جانچ کو لے کر پراچی نے کہا کہ 'دیوبند دہشت گردوں کی پناہ گاہ ہے۔ پاسپورٹ کی اب نہیں پانچ سال قبل جانچ ہونی چاہئے تھی۔ ابھی تحقیقات ہو رہی ہے، بہت اچھی بات ہے، یہ ضروری ہےباغپت پہنچیں سادھوی پراچی نے کمل ہاسن کے بیان کہ 'خود کو ہندو دہشت گرد کہنے سے انکار نہیں کر سکتے دائیں بازو' پر کہا کہ 'جو فلم انڈسٹری کے لوگ ہیں وہ صرف ہندوؤں کو بدنام کرنے کی سازش رچ رہے ہیں. چاہے شاہ رخ خان ہوں یا عامر خان ہوں یا پھر کمل حسن ہوں۔انہوں نے کہا کہ 'یہ بتائیں کہ افضل گرو کون تھا، یعقوب میمن کون تھا، برہان وانی کون تھا، اظہر مسعود کون ہے؟رام مندر بابری مسجد معاملے میں شری شری روی شنکر کی ثالثی کے سوال پر انہوں نے کہا کہ 'کسی بھی قیمت پر ایودھیا میں مسجد نہیں بننے دیں گے۔ یہ کہنے پر کہ وہاں دونوں بننے کی بات ہو رہی ہے۔ اگر مسجد بنتی ہے تو خوش موقف کیا رہے گا، سادھوی نے کہا کہ 'مسجد نہیں بننے دیں گے، رام مندر ایودھیا میں بنے گا۔ دنیا کی کوئی طاقت نہیں روک پائے گی

سادھوی نے کہا کہ 'کورٹ کا ہم احترام کرتے ہیں. کورٹ نے کہا ہے کہ دونوں طرف آپس میں بیٹھ کر غور کر لیں، پہل تو یہی ہوگی۔ لیکن اس کے بعد بھی کوئی راستہ نہیں نکلتا تو پھر جب راجیہ سبھا میں مکمل اکثریت ہو جائے گا تو وہاں قانون بنا کر کے رام مندر تعمیر کیا جائے گا۔ واضح رہے کہ بی جے پی لیڈر سادھوی پراچی آریہ باغپت ڈسٹرکٹ کورٹ میں پیشی پر آئی تھیں۔ 2013 میں بڈوت میں جانوروں كٹان کی مخالفت میں دھرنے کے بعد ہنگامہ کیس میں سادھوی پراچی پر سنگین دفعات میں مقدمہ چل رہا تھا، جس میں کورٹ نے آج سادھوی پراچی کو مستثنی کر دیا، جس میں كلينچيٹ ملنے کے بعد کورٹ کے کاغذوں کی تکمیل کرنے کے لئے سادھوی پراچي کورٹ آئی تھیں

The short URL of the present article is: http://harpal.in/8J6q9

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے