Breaking News
Home / اہم ترین / ریاست بھر میں ایس ایس ایل سی امتحانات کا جمعرات 30 مارچ سے آغاز۔ آٹھ لاکھ سے زائد طلبہ ہونگے شریک امتحان

ریاست بھر میں ایس ایس ایل سی امتحانات کا جمعرات 30 مارچ سے آغاز۔ آٹھ لاکھ سے زائد طلبہ ہونگے شریک امتحان

بنگلورو۔(ہرپل نیوز،ایجنسی)29؍مارچ:رواں سال کے ایس ایس ایل سی امتحانات 30 مارچ سے شروع ہورہے ہیں، ان امتحانات کیلئے کرناٹکا سکینڈری ایجوکیشن ایگزامنیشن بورڈ کی طرف سے تمام تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ 30 مارچ سے 12؍ اپریل تک یہ امتحانات جاری رہیں گے۔ پہلی بار امتحانات میں وقت کی پابندی کو سختی سے لاگو کیا گیا ہے۔ صبح 9-30 بجے امتحان شروع ہوگا ، اس کیلئے 9-15 بجے سے 9-30 بجے تک امتحان ہال میں داخل ہونے کی مہلت دی جائے گی۔ہر امتحانی مرکز میں ان اوقات پر دو گھنٹیاں بجائی جائیں گی۔ دوسری گھنٹی کے بعد کسی بھی طالب علم کو کسی بھی حال میں امتحان ہال میں داخلہ نہیں دیا جائے گا۔ 30 مارچ کو فرسٹ لینگویج کا امتحان ہوگا۔3؍ اپریل کو میتھس ، 5 اپریل کو سکینڈ لینگویج 7؍ اپریل کو سائنس، 10 اپریل کو تھرڈ لینگویج ، اور 12؍ اپریل کو سوشل سائنس کا امتحان ہوگا۔کل اگادی کی چھٹی کے سبب امتحانی عملہ اور افسران نے آج ہی امتحانی مراکز پہنچ کر طلبا کے رجسٹریشن نمبرس وغیرہ درج کردئے ہیں۔ ایس ایس ایل سی امتحان میں حصہ لینے والے طلبا کی سہولت کیلئے امتحانی بورڈ نے حسب معمول ٹیلی فون ہیلپ لائن قائم کی ہے۔ 080-23310075 یا 23310076 پر فون کرکے طلبا اپنے شکوک کا ازالہ کرسکتے ہیں۔ امتحانات کو انتہائی شفافیت سے انجام تک پہنچانے کیلئے بورڈ کی طرف سے کئی قدم اٹھائے گئے ہیں۔ بورڈ کی ڈائرکٹر یشودا بوپنا نے بتایاکہ امتحانات کے دوران نقل نویسی ا ور دھاندلیوں یا پھر پرچۂ سوالات کے افشاء کو روکنے کیلئے بورڈ کی طرف سے تمام احتیاطی قدم اٹھائے گئے ہیں۔ امسال جملہ 2770امتحانی مراکز قائم کئے گئے ہیں، جن میں سے 1092 سرکاری اسکولوں ، 1084ایڈڈ اور 594 ان ایڈڈ ہیں۔ 17؍ امتحانی مراکز کو حساس ترین اور 72کو حساس قرار دیاگیا ہے۔جہاں مبینہ دھاندلیوں کے خدشات کو دیکھتے ہوئے اضافی حفاظتی انتظامات کئے گئے ہیں۔ ریاست بھر کے 1184 اسکولوں میں دھاندلیوں پر نظر رکھنے کیلئے سی سی ٹی وی کیمرے ہر کمرے میں نصب کئے گئے ہیں، جبکہ 1361مراکز میں امتحانی سپرنٹنڈنٹ کے دفاتر میں سی سی ٹی وی سہولت مہیا کرائی گئی ہے۔اس بار امتحان میں جملہ877174 طلبا امتحان لکھ رہے ہیں، جن میں469835 لڑکے اور407339 لڑکیاں شامل ہیں۔ شہری علاقوں سے جملہ 390332 طلبا امتحان لکھ رہے ہیں، جن میں سے 187625 لڑکیاں اور 202707 لڑکے شامل ہیں۔ دیہی علاقوں سے 486842 طلبا امتحان دیں گے۔ جن میں 219714 لڑکے اور 267128 لڑکیاں شامل ہیں۔ ریاست بھر کے 14198 اسکولوں کے طلبا امتحان دے رہے ہیں ، جن میں 5834 ان ایڈڈ ، 3301 ایڈڈ اور 5163 سرکاری اسکول شامل ہیں۔ محکمۂ تعلیمات کی کمشنر سوجنیا نے ایک اخباری کانفرنس میں یہ تمام تفصیلات دیتے ہوئے واضح کیا کہ امتحانی مرکز میں داخل ہونے کیلئے طلبا کو صبح9-45بجے تک کی مہلت دی گئی ہے، اس کے بعد کسی کو امتحانی مرکز میں داخل ہونے نہیں دیا جائے گا۔ انہوں نے بتایاکہ پہلی بار تین اسکولوں پر مشتمل کلسٹر کاتعین کیاگیاہے۔ طلبا کیلئے امتحانی مراکز کا انتخاب غیر متعین (Random) طریقے سے کیا گیا ہے۔امتحانات کیلئے سخت حفاظتی انتظامات یقینی بنانے کیلئے ہر امتحانی مرکز کے ایک کلومیٹر کے دائرہ میں امتناعی احکامات لاگو کئے گئے ہیں۔ طلبا کو آنے جانے کی سہولت فراہم کرنے کیلئے ہال ٹکٹ دکھانے پر بی ایم ٹی سی بسوں میں انہیں پاس تصور کرنے کی ہدایت جاری کی جاچکی ہے۔ کے ایس آر ٹی سی بسوں میں بھی یہ سہولت دستیاب رہے گی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/mmxZ9

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے