Breaking News
Home / بین الاقوامی خبریں / سعودی عرب کی زیر قیادت اتحادی افواج ممنوعہ تنظیموں کی فہرست میں شامل

سعودی عرب کی زیر قیادت اتحادی افواج ممنوعہ تنظیموں کی فہرست میں شامل

اقوام متحدہ(ہرپل نیوز،ایجنسی) 6 اکتوبر۔ اقوام متحدہ نے یمن میں 2016میں مختلف فوجی کارروائیوں میں اسکولوں اور اسپتالوں میں 683بچوں کے ہلاک ہونے کے معاملہ میں سعودی عرب کی قیادت والی فوجی اتحاد کو ممنوعہ تنظیموں کی فہرست میں شامل کیا ہے لیکن یہ کہا ہے کہ اس تنظیم نے بچوں کی بہتری اور تحفظ کیلئے بھی کام کیا ہے۔ اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل اینٹونیوگوتریز کی جانب سے اقوام متحدہ ’بچے اور ہتھیار ‘تنازع معاملوں کی نمائندہ ورجینیا گانبا کے ذریعہ تیار کی گئی اس رپورٹ کو کل سیکورٹی کونسل میں پیش کیا گیا تھا اور اس میں ایران کے حمایت یافتہ باغی گروپ حوثی کا بھی نام ہے۔ اس کے علاوہ یمن میں سرکار حامی ملیشیا اور القاعدہ کو بھی ممنوعہ تنظیموں کی فہرست میں شامل کیا گیا ہے۔ رپورٹ میں ایسی تنظیموں کے خلاف اقوام متحدہ کی جانب سے کی جانے والی کسی بھی کارروائی کا کوئی ذکر نہیں ہے۔ سعودی عرب کے فوجی اتحاد کو گزشتہ سال بھی مذکورہ فہرست میں ڈالا گیا تھا اور بعد میں اسے اس فہرست سے ہٹا لیا گیا تھا۔ اس بار اس رپورٹ میں دوفہرستیں بنائی گئی ہیں جن میں کچھ تنظیمیں تو ایسی ہیں جو اس فہرست میں ہیں لیکن انہوں نے بچو ں کی فلاح و بہبود کیلئے کچھ کام کئے ہیں اور دوسری فہرست میں ان تنظیموں کو شامل کیا گیا ہے جنہوں نے ایسا کوئی کام نہیں کیا ہے۔ یمن میں ایک گھر کے اندر ملبہ میں پڑا ہوا ٹوٹا کھلونا۔ علامتی تصویر، رائٹرز۔ یمن میں گزشتہ ڈھائی برسوں سے جاری خانہ جنگی میں اب تک10ہزار سے زائد لوگ مارے جا چکے ہیں اور اس سے ملک کی اقتصادی حالت بدتر ہوگئی ہے جس سے لاکھوں لوگوں کو بھکمری کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ یہاں صدر عبد ربہ منصور ہادی کی حکومت کو سعودی اتحادی افواج کی حمایت مل رہی ہے اور انہوں نے حوثی گروپ کے خلاف جنگ چھیڑ رکھی ہے ،جس کا شمالی یمن کے ایک بڑے حصہ پر قبضہ ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/Jqc0O

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے