Breaking News
Home / اہم ترین / سینما گھروں میں قومی ترانے کے لئے کھڑے ہونا لازمی نہیں:سپریم کورٹ کاسخت موقف۔ قومی ترانہ کےمعاملہ میں واضح پالیسی بنانے مرکزی حکومت کو عدالت کامشورہ

سینما گھروں میں قومی ترانے کے لئے کھڑے ہونا لازمی نہیں:سپریم کورٹ کاسخت موقف۔ قومی ترانہ کےمعاملہ میں واضح پالیسی بنانے مرکزی حکومت کو عدالت کامشورہ

نئی دہلی۔(ہرپل نیوز،ایجنسی)24 اکتوبر۔حب الوطنی ثابت کرنے کے لئے لوگوں کو سینما گھروںمیں قومی ترانے کے وقت کھڑے ہونے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔ یہ وضاحت سپریم کورٹ نے پیر کو اپنے ایک فیصلے میں کی ااور مرکز کو تلقین کی کہ تھیٹروں میں قومی ترانے سے متعلق وہ اپنے ضوابط خود وضع کرے کورٹ کے کندھے پر رکھ کربندوق نہ چلائے ۔

ملک کی سب سے بڑی عدالت نے اپنے سابقہ موقف سے مکمل انحراف کرتے ہوئے کرتے ہوئے دوٹوک انداز میں کہا کہ اگر کوئی شخص قومی ترانہ گاتے وقت کھڑا نہیں ہوتا تو اس کا یہ مطلب نہیں کہ وہ کم محب وطن ہے ۔ غیر معمولی لب و لہجہ کا استعمال کرتے ہوئے چیف جسٹس دیپک مشرا کی قیادت والی بنچ نے کہا کہ ’’کل حکومت یہ کہہ سکتی ہے کہ لوگ سیمنا گھروںمیں ٹی شرٹ اور شارٹس نہ پہنیں کیونکہ اس سے قومی ترانے کی توہین ہو تی ہے ‘‘۔سپریم کورٹ نے سنیما گھروں میں قومی ترانہ بجائے جانے کے سلسلہ میں مرکزی حکومت کو واضح پالیسی بنانے اور اس کے لئے قومی پرچم ضابطہ میں مناسب ترمیم کرنے کی بھی صلاح دی ہے ۔ اس معاملہ کی سماعت کے دوران اٹارنی جنرل کے کے وینوگوپال نے کہا کہ ہندستان ایک متنوع ملک ہے اور یکسانیت لانے کے لئے سنیما گھروں میں قومی ترانہ بجانا لازمی ہے ۔اس پر بنچ نے حکومت سے سوال کیا کہ آخر کیوں وہ قومی ترانہ کے تعلق سے واضح پالیسی نہیں بنا رہی ہے ۔عدالت نے کہا کہ ’’مرکزی حکومت کو اس معاملہ میں غورکرنا چاہئے ۔حکومت کوقومی پرچم کے ضابطہ میں ترمیم کے تعلق سے کسی طرح کے ٹال مٹول سے کام نہیں لینا چاہئے ،کیونکہ عدالت اپنے کندھے پر بندوق رکھ کر سرکار کو چلانے نہیں دیگی۔‘‘

خیال رہے کہ عدالت نے شیام نارائن چوکسی کی مفادعامہ کی عرضی پر گزشتہ سال کے اواخر میں عبوری حکم جاری کرتے ہوئے سبھی سنیما گھروں میں فلموں کی نمائش شروع ہونے سے قبل لازمی طور پر قومی ترانہ بجائے جانے کا حکم دیا تھا اور قومی ترانہ بجنے کے دوران ناظرین کو کھڑاہونا لازمی قراردیا تھا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/u4Gbt

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے