Breaking News
Home / اہم ترین / ششی کلا انا ڈی ایم کے پارٹی اراکین کی لیڈر منتخب، نئی وزیر اعلی بننے میں قانونی رکاوٹ، حلف برداری کی تقریب نو فروری کو

ششی کلا انا ڈی ایم کے پارٹی اراکین کی لیڈر منتخب، نئی وزیر اعلی بننے میں قانونی رکاوٹ، حلف برداری کی تقریب نو فروری کو

چنئی(ہرپل نیوز،ایجنسی) 7 فروری:۔ انا دراوڑ منیتر کزگم (اے آئی اے ڈی ایم کے) کی جنرل سکریٹری ششی کلا نٹراجن تمل ناڈو کی نئی وزیر اعلی ہوں گی۔ انا ڈی ایم کے کے ممبران اسمبلی-ممبران پارلیمنٹ کی اتوار کو ہوئی میٹنگ میں ششی کلا کو پارٹی اراکین کی لیڈر منتخب کر لیا گیا۔ اس کے بعد اے پنيرسیلوم نے گورنر سی ودیا راؤ کو اپنا استعفی سونپ دیا ہے۔ ذرائع کے مطابق ششی کلا 8 یا 9 فروری کو سی ایم عہدے کا حلف لے سکتی ہیں۔دراصل، گزشتہ سال پانچ دسمبر کو وزیر اعلی جے للیتا کے انتقال کے بعد ششی کلا کو پارٹی کا جنرل سکریٹری بنایا گیا تھا۔ اس کے بعد سے ایسا بہت حد تک مانا جا چکا تھا کہ آنے والے وقت میں وہ ہی وزیر اعلی کا عہدہ سنبھالیں گی۔ پارٹی کے کئی لیڈر ششی کلا کو وزیر اعلی بنائے جانے کی حمایت میں تھے۔ ششی كلا کو پارٹی اراکین کی لیڈر منتخب کئے جانے کے پیچھے یہ وجہ بھی بتائی جا رہی ہے کہ پارٹی کے سینئر لیڈر چاہتے تھے کہ پارٹی اور حکومت کے الگ الگ اقتدار کے مرکز نہیں ہونے چاہئیں۔ اتوار کو ہوئے اجلاس میں پارٹی جنرل سکریٹری ششی کلا کے علاوہ وزیر اعلی پنيرسیلوم اور کچھ سینئر رہنما شامل ہوئے۔تاہم، پارٹی کے ایک دھڑے کا دعوی ہے کہ اجلاس کا یہی ایجنڈا تھا۔ وہیں کچھ ارکان نے اسے مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اجلاس حکومت اور پارٹی کے درمیان ہم آہنگی قائم کرنے کے لئے منعقد کیا گیا تھا۔ ہفتہ کو ششی کلا نے سینئر رہنماؤں کو پارٹی کے اہم عہدوں پر مقرر کیا تھا، جن میں کچھ سابق وزیر اور ایک سابق میئر بھی شامل تھے۔

ششی کلا کے وزیر اعلی بننے میں قانونی رکاوٹ، حلف برداری کی تقریب نو فروری کو

چنئی۔ انا ڈی ایم کے کی جنرل سکریٹری وی کے ششی کلا کے تمل ناڈو کی وزیر اعلی بننے کی راہ میں بڑا مسئلہ دکھائی دے رہا ہے۔ اس کی وجہ گورنر سی ودیا راؤ کا نئی دہلی سے چنئی کے بجائے ممبئی جانا مانا جا رہا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ گورنر راؤ ششی کلا کو عہدے کا حلف دلانے سے پہلے قانونی مشورہ لے رہے ہیں۔ تاہم گورنر کے عین مطابق منصوبہ بندی کو لے کر کوئی سرکاری بیان نہیں آیا ہے۔ اس درمیان انا ڈی ایم کے کے ذرائع کے حوالے سے خبر آئی ہے کہ منگل کو ہونے والی حلف برداری کی تقریب ٹال دی گئیہے۔ اب وہ 9 فروری کو ہوگی۔سپریم کورٹ نے پیر کو اشارہ دیا کہ وہ ششی کلا کے خلاف آمدنی سے زیادہ جائیداد کے ایک معاملے میں جلد فیصلہ سنا سکتا ہے۔ تمل ناڈو کی آنجہانی وزیر اعلی جے جے للتا بھی اس معاملے میں ملزم تھیں۔ حلف لینے کے بعد قصور ثابت ہونے پر ششی کلا کو وزیر اعلی کے عہدے سے استعفی دینا ہوگا۔کورٹ میں پیر کو ایک مفاد عامہ کی عرضی دائر ہوئی جس میں ششی کلا کو وزیر اعلی کے عہدے کا حلف لینے سے روکنے کی کوشش کی گئی کیونکہ ڈی اے کیس میں جرم ثابت ہونے پر اگر انہیں استعفی دینا پڑا تو قانون وانتظام کی صورت حال خراب ہو سکتی ہے۔

 

The short URL of the present article is: http://harpal.in/Pxt9B

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے