Breaking News
Home / اہم ترین / قومی ترانہ گانے کو لازمی قرار دینےوالے بھاجپا رہنماٹھیک سے نہیں سناپائےقومی گیت۔ویڈیووائرل ہوتے ہی حب الوطنی کی ہوا نکل گئی

قومی ترانہ گانے کو لازمی قرار دینےوالے بھاجپا رہنماٹھیک سے نہیں سناپائےقومی گیت۔ویڈیووائرل ہوتے ہی حب الوطنی کی ہوا نکل گئی

حب الوطنی کو لے کر ملک میں خوب سیاست ہو رہی ہے۔ اور قومی گیت کو لے کر بھی تنازعے ہوتے ہیں۔ٹی وی چینلوں پر حب الوطنی کو لے کر بحث بھی ہو رہی ہیں۔
اس سے زیادہ طنز آمیز کیا ہو سکتا ہے ۔ جس طرح سے بھاجپا حکومت نے تمام مدارس میں قومی پرچم لہرانے اور قومی ترانہ گانے کو لازمی قراردیا  ہے  لیکن  پارٹی کے ترجمان نیوز چینل پر بحث کے دوران ترانہ گانے میں لڑکھڑا جا تے ہیں ۔ اسے کیا کہاجائے کہ ایسے رہنما حب الوطنی کی بجائے ”حب الکرسی “ کا ثبوت دیتے ہیں۔زی سلام ٹی وی چینل پر  ایک "لائیو شو " میں مدارس میں قومی ترانہ گانے کو لازمی قرار دینے پر بحث ہو رہی تھی تو بی جے پی کے ترجمان قومی گیت ٹھیک سے نہیں سنا  پائے اور جب موبائل سے پڑھنے کی  کوشش کی تو بھی ٹھیک سے نہیں پڑھ پائے۔
 ٹی وی پر لائیو شو کے دوران قومی گیت کو لازمی قرار دینے والے بی جے پی ترجمان نرین  کمار سے جب آل انڈیا مسلم ذاتی قانون سازی کے مففی اعجاز ارشد قاسمی نے قومی ترانہ سنانے کو کہا تو اٹکتے نظر آئے۔   بی جے پی ترجمان نے موبائل فون پر دیکھ کر بھی  پڑھنے کی کوشش کی تو پھر بھی وہ ٹھیک سے نہیں پڑھ  پائے۔یہ پہلی بار نہیں ہوا ہے اس سے قبل بھاجپا کے ہی  ایک ممبر قومی گیت"جن گن من" نہیں سنا پائے۔قبل ازیں، ایک ٹیلی ویژن شو کے دوران، اتر پردیش  کے اقلیتی بہبود کے وزیر مملکت بلدیو سنگھ اولاكھ قومی گیت نہیں گا پائے تھے۔دونوں ویڈیو سوشل میڈیا کے ذریعے  وسیع پیمانے پر پھیل گئے ہیں۔  ایک ویڈیو  یہاں پیش کی گئی ہے  لنک پر کلک کیجئے
The short URL of the present article is: http://harpal.in/7KbKM

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے