Breaking News
Home / اہم ترین / ماری تہوار کا مذہبی جوش و خروش ماتم میں تبدیل

ماری تہوار کا مذہبی جوش و خروش ماتم میں تبدیل

ماری وسرجن سے کچھ دیر قبل جالی کوڈی میں سمندری لہروں کی نذر ہوا تیرہ سالہ لڑکا

بھٹکل:(ہرپل نیوز) 28جولائی:بھٹکل میں منائے گئے براداران وطن کے تہوار ’’ماری حبّا‘‘ کے وسرجن سے قریب آدھے گھنٹے پہلے جالی سمندر میں ایک دلدوز واقعہ پیش آیا جس میں ساتویں جماعت کا ایک تیرہ سالہ طالب علم ڈوب کر ہلاک ہوگیا جس کی شناخت گوردھن منجوناتھ نائک کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ ہرپل آن لائن کو ملی اطلاع کے مطابق گوردھن جالی کوڈی سرکاری اسکول میں ساتویں جماعت میں زیر تعلیم ایک یتیم طالب علم تھاجو شام کے وقت اپنے تین دوستوں کے ساتھ سمندر میں تیر رہا تھا جہاں وہ بے قابو ہوکر سمندری موجوں کی نذر ہوگیا۔وسرجن کے انتظار میں جالی بیچ پر پہلے سے موجود لوگ فوری طور پرگوردھن کی مدد کو  پہنچے مگر وہ اسے نہیں بچا سکے البتہ اس کے تین ساتھیوں کولوگوں نے سمندر سے بحفاظت باہر نکال دیا۔ گوردھن کے تعلق سے بتایا گیا ہے کہ اس کو سرکاری ہاسپٹل لے جانے کے دوران راستے میں ہی اس نے دم توڑ دیا۔مقامی لوگوں نے موقع پر ایمبولینس کی سہولت حاصل نہ ہونے پر ہنگامہ کیا پھر فوری مدد دیتے ہوئے اسے بائک کے ذریعے لے جایا گیا،مگر اسے راستے میں پولیس کی گاڑی پر ڈال کر سرکاری ہاسپٹل لے جایا گیاجہاں اسے مردہ گھوشت کیا گیاواقعہ وقع پذیر ہونے کے بعد کی اطلاع ملتے ہی بھٹکل سرکاری اسپتال میں عوام کثیر تعداد میں جمع ہوگئے اور یوں ماری تہوار  کا مذہبی جو ش و خروش ماتم میں بدل گیا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/eycIo

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے