Breaking News
Home / اہم ترین / مختار عباس نقوی نے مسلمانوں کے سامنے غربت کو سب سے بڑا چیلنج قرار دیا

مختار عباس نقوی نے مسلمانوں کے سامنے غربت کو سب سے بڑا چیلنج قرار دیا

نئی دہلی، 2؍اکتوبر(ہر پل نیوز ؍آئی این ایس انڈیا )اقلیتوں اور کمزور طبقوں کو حقوق دلانے کے این ڈی اے حکومت کے ’راج دھرم‘کا ذکر کرتے ہوئے اقلیتی امور کے وزیر مختار عباس نقوی نے کہا ہے کہ مسلمانوں کے سامنے غربت سب سے بڑا چیلنج ہے اور غربت کے خلاف جنگ کرنا مودی حکومت کا سب سے بڑا عزم ہے۔نقوی نے میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ اقلیتوں، غریبوں اور کمزور طبقات کو ان کے حقوق دلانا این ڈی اے حکومت کا راج د ھرم ہے۔غربت کے خلاف جنگ سے اقلیتوں اور خاص طورپر مسلمانوں کو فائدہ ہو گا کیونکہ تقریبا 75فیصد مسلمان خط افلاس سے نیچے زندگی گزاررہے ہیں۔مسلمانوں کے سامنے غربت سب سے بڑا چیلنج ہے اور غربت کے خلاف جنگ کرنا حکومت کا سب سے بڑا عزم ہے۔انہوں نے کہا کہ قوم، مذہب اور علاقے کی بنیاد پر امتیازی سلوک اب بھی جاری ہے اور کمزور طبقات کو اس امتیازی سلوک کی وجہ سے کافی مشکلا ت کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور اس امتیازی سلوک کی لعنت کا خاتمہ کرنے اور معاشرے میں ہم آہنگی کو مضبوط بنانے کی ضرورت ہے۔وقف املاک کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں اقلیتی امور کے وزیر نے کہا کہ وزارت مسلم کمیونٹی کی فلاح و بہبود کے لیے مختلف حکمت عملی پر کام کر رہی ہے جن میں وقف املاک کی حفاظت اور ترقی شامل ہے۔اس سلسلے میں کئی ریاستیں بہترین کام کر رہی ہیں۔ملک بھر میں 31ریاستی وقف بورڈ اور 427000رجسٹرڈ وقف جائیدادیں موجود ہیں۔اس کے علاوہ بہت سی غیر رجسٹرڈ وقف جائیدادیں بھی ہیں۔کچھ ریاستوں میں کئی وقف جائیدادیں وقف مافیا کے چنگل میں ہیں۔انہوں نے دعوی کیا کہ وقف املاک کو غیر قانونی قبضے سے آزاد کرانے کے لیے مرکزی حکومت ملک بھر میں جنگی پیمانے پر کارروائی کر رہی ہے۔ان املاک کا مسلم کمیونٹی کی فلاح و بہبود اور ان کو سماجی ، اقتصادی اور تعلیمی طورپر با اختیار بنانے کے لیے استعمال کیا جائے گا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/QrHA7

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے