Breaking News
Home / اہم ترین / ملیشیا حکومت ڈاکٹر ذاکر نائک کو ہندوستان کے حوالہ کرنے پر رضامند

ملیشیا حکومت ڈاکٹر ذاکر نائک کو ہندوستان کے حوالہ کرنے پر رضامند

معروف اسلامی مبلغ ڈاکٹر ذاکر نائیک کو ہندوستان کے حوالہ کرنے سے متعلق ملیشیا نے اپنی رضامندی ظاہر کر دی ہے۔ گزشتہ کچھ مدت سے ملیشیا میں پناہ لینے والے ذاکر نائک کا اب ہندوستان واپسی کا راستہ صاف ہو گیا ہے۔ ملیشیا کی حکومت نے کہا ہے کہ اگر حکومت ہند ان کی حوالگی کا مطالبہ کرتی ہے تو وہ ذاکر نائک کو اس کے حوالہ کر دے گی۔انقلاب میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق، ملیشیا حکومت کے اس رخ سے یہ واضح ہو گیا ہے کہ وہ ذاکر نائک کو ہندوستان کو سونپنے کے لئے تیار ہے۔ ملیشیا کے نائب وزیر اعظم زاہد حمیدی نے کہا کہ اگر حکومت ہند ذاکر نائک کی حوالگی کے لئے درخواست دے گی تو وہ انہیں سونپ دیں گے۔ تاہم، انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ ابھی اس تعلق سے ان کے پاس کوئی درخواست وصول نہیں ہوئی ہے۔

نائب وزیر اعظم نے کہا کہ فی الحال ذاکر نائک کا پاسپورٹ منسوخ نہیں کیا جا سکتا کیونکہ ذاکر نائک نے ابھی تک ملیشیا کے کسی بھی قانون کی خلاف ورزی نہیں کی ہے۔ خیال رہے کہ حال ہی میں وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے کہا تھا کہ وہ ذاکر نائک کی حوالگی کے لئے ملیشیا سے درخواست کریں گے۔ ذاکر نائک پر نوجوانوں میں مذہبی انتہا پسندی کو فروغ دینے کا الزام ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/ieeoE

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے