Breaking News
Home / اہم ترین / مولاناصغیر احمد خان رشادی امیر شریعت منتخب

مولاناصغیر احمد خان رشادی امیر شریعت منتخب

بنگلورو  (ہرپل نیوز،ایجنسی)28 ستمبر۔یہاں دارلعلوم سبیل الرشاد میں علماء، عمائدین ، مدراس اور مساجد کے ذمہ داروں کی ایک خصوصی نشست میں اتفاق رائے سے مولانا صغیر احمد خان رشادی کو امیر شریعت کرناٹک کے منصب کیلئے منتخب کرلیا گیا ۔ ا س موقع پر مولانا صغیر احمد خان نے یقین دلایا کہ وہ اس ذمہ داری کو نبھاتے ہوئے طلاق ،خلع۔وارثت جیسے شرعی مسائل کو اچھے طریقہ سے سلجھانے کی پوری کوشش کریں گے ۔ آپ نے کہا کہ امیر شریعت اول مولانا ابوسعود صاحبؒ اور امیر شریعت دوم مفتی محمد اشرف علی صاحبؒ کے نقش قدم پر چلتے ہوئے امت میں اتحاد کوقائم رکھنے اور اتحاد کو فروغ دینے کی ہرممکن کوشش کریں گے۔ اس موقع پر رکن پارلیمان اور آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے ممبر ڈاکٹر کے رحمن خان نے امیر شریعت کے منصب کیلئے مولانا صغیر احمد خان کے نام کی تائید کرتے ہوئے مسرت کا اظہار کیا اور کہا علماء کرام اور عمائدین نے اتفاق رائے سے امیر شریعت کرناٹک سوم کا انتخاب کیا ہے ہمیں امید ہے کہ وہ مفتی محمد اشرف علیؒ کے نقش قدم پر چلتے ہوئے ملت کی رہنمائی کریں گے۔ اور شریعت کے تحفظ کیلئے فکر مند رہیں گے۔ آج کی اس خصو صی نشست میں دارالعلوم سبیل الرشاد کے مہتمم مولانا احمد معاذ نے مہمانوں کا خیر مقدم کیا اور مولانا خالد بیگ نے مولانا صغیر احمد خان رشادی کے نام کی تجویز پیش کی اسی طرح مفتی عبدالعزیز بلگام کو نائب امیر شریعت کے منصب کیلئے نام تجویز کیا تو تمام شرکاء نے اتفاق رائے سے دونوں ناموں کی تجویز پر اتفاق کرتے ہوئے تائید کا اظہار کیا۔تائید کرنے والوں میں جمعیت العلماء ہند کرناٹک کے صدر مفتی افتخار احمد قاسمی اور جمعیت العلماء ہند کرناٹک کے سکریڑی مفتی شمس الدین بجلی، جمعیت اہلحدیث کے نمائندہ اور چارمینار مسجد کے خطیب وامام مولانا اعجاز احمد ندوی جمعیت مہدویہ کے نمائندہ اور مسلم پرسنل لاء بورڈ کے رکن مفتی باقرارشد، انجمن ا مامیہ کے صدر جناب علی رضا، سنی جمعیت العلماء آل کرناٹک اور جمعہ مسجد ٹرسٹ کی طرف سے جناب انور شریف جلوس محمدی کمیٹی کے صدر سید وحید الرحمن قادری،جنرل سکریٹری جناب افسر بیگ،تبلیغی جماعت کا مرکز سلطان شاہ کمیٹی کی طرف سے مولانا ریاض احمد نے تائید کا اعلان کیا سلطان شاہ کے صدر جناب مالک منیر اور سکریڑی سید جمال بھی اس نشست میں موجود تھے ۔ اس موقع پر مولانا صغیر احمد خان کی تائید کرنے والوں میں جامع مسجد سٹی کے مولانا مقصود عمران مسجد بیوپاریاں کے خطیب وامام مولانا حنیف افسر عزیزی۔ مسجد قادریہ کے خطیب مولانا لطف اللہ رشادی ، روزنامہ پاسبان کے ایڈیٹر جناب عبیداللہ شریف لبا بین جماعت کی طرف سے جناب وی محمد اقبال، میمن جماعت کی طرف سے جناب عاصم سیٹھ، آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے رکن مولانا مصطفےٰ رفاعی، مسجد اشرفیہ کے صدر مولانا نوشاد عالم قاسمی، مدرسہ عربیہ جامعیتہ العلوم القرانیہ کے مہتمم مولانا صلاح الدین ، مدرسہ جامعیہ ندوۃ الابرار کے مہتمم مولانا ریاض احمد، مفتی عبدالغفار قاسمی، مدرسہ اصلاح البنات کے مہتمم مولانا شبیر احمد ندوی مشہور کالم نگار جناب سید شفیع اللہ، صدائے اتحاد کی طرف سے جناب ضمیر پاشاہ ریٹائٹرڈ آئی اے یس،جے شفیع اللہ،ٹرسٹی،سالار پبلکیشنز،، مسجد ابراہیم کمیٹی ککمہارپیٹ ، دارالعلو م سبیل الرشاد کے ارکان شورہ ، مرکزی دارالقضاء سے جڑے اضلاع کے قاضی حضرات نے بھی مولانا صغیر احمد خان رشادی کے انتخاب پر تائید کا اظہار کیا اس خصوصی اجلاس میں دارالعلوم سعید یہ کے مہتمم عبدالرحیم، مولانا عبدالغفور باقوی ، مولانا راہی فدائی ، کئی مدارس اور مساجد کے ذمہ دار احباب اور علماء کرام شریک تھے جامع مسجد سٹی کے خطیب وامام مولانا مقصود عمران نے نظامت کے فرائض انجام دےئے نئے امیر شریعت کرناٹک مولانا صغیر احمد خان کی دعا پر خصوصی نشست اختتام پزید ہوئی۔ر ان تمام احباب نے اپنے اپنے طبقات اور اداروں کی جانب سے فرداً فرداً بھی حضرت مولانا صغیر احمد خان صاحب کے نام کی بحیثیت امیر شریعت تائید کا اعلان کیا۔ ان میں قابل ذکر درج ذیل ادارے، جماعتیں اور احباب شامل ہیں۔دارالعلوم سبیل الرشاد کے اساتذہ، ارکان شوریٰ اور طلباء کی جانب سے حضرت مولانا احمد معاذ رشادی، مہتمم دارالعلوم سبیل الرشاد،مسجد قادریہ کے خطیب حضرت مولانا محمد لطف اللہ رشادی،رکن پارلیمان و سابق مرکزی وزیر ڈاکٹر کے رحمن خان صاحب،مرکز دعوت و تبلیغ سلطان المساجد سے حضرت مولانا ریاض احمد رشادی،سابق آئی اے ایس افسر اور نمائندہ ں صدائے اتحاد جناب سید ضمیر پاشاہ،جمعےۃ علماء کرناٹک کی طرف سے جنرل سکریٹری مفتی شمس الدین بجلی قاسمی،مدرسہ شاہ ولی اللہ کی جانب سے مفتی محمد محسن قاسمی،جمعیت اہل حدیث کی طرف سے مولانا اعجاز احمد ندوی،جماعت مہدویہ کی طرف سے مشائخ مفتی سید باقر ارشد قاسمی،انجمن امامیہ شیعہ کی طرف سے اس کے صدر جناب علی رضا ضامن،جلوس محمدی کمیٹی کی جانب سے جنرل سکریٹری جناب افسر بیگ قادری،جماعت لبابین بنگلور معسکر کی طرف سے جناب متولی ایحل محمد اقبال ،مرکز کمہارپیٹ حضرت ابراہیم علی شاہ مسجد اور امارت شرعیہ کرناٹک کی جانب سے امجد شریف صاحب، حضرت مولانا عتیق الرحمن ارشد رشادی،سنی جمیعت علماء آل کرناٹک اور جمعہ مسجد بورڈ ٹرسٹ کی جانب سے جناب انور شریف،جمعےۃ علماء کرناٹک کے مفتی عبد الغفار قاسمی،جامعہ ندوۃ الابرار کے مولانا ریاض احمد رشادی، جامع مسجد و مسلم چاریٹبل فنڈ ٹرسٹ کی جانب سے حضرت مولانا مقصود عمران رشادی،مدرسہ اصلاح البنات بنگلور کی جانب سے مولانا شبیر احمد ندوی،آل انڈیا ملی کونسل کرناٹک کی جانب سے جنرل سکریٹری جناب سید شاہد احمد،آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے ریاستی اراکین کی جانب سے حضرت مولانا شاہ قادری سید مصطفی رفاعی جیلانی ندوی،جمعےۃ علماء کرناٹک کے صدر حضرت مولانا مفتی افتخار احمد قاسمی نے بھی اپنی جانب سے حضرت امیر شریعت سوم کے لئے حضرت مولانا صغیر احمد رشادی صاحب کے نام کی تائید اور سمع و طاعت کا اعلان کیا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/vorkr

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے