Breaking News
Home / اہم ترین / نیوز18کے ساتھ خاص انٹرویو میں بولے راج ناتھ،میں یوپی کا سی ایم بنوں گا تو دوسروں کے ساتھ ناانصافی ہو گی

نیوز18کے ساتھ خاص انٹرویو میں بولے راج ناتھ،میں یوپی کا سی ایم بنوں گا تو دوسروں کے ساتھ ناانصافی ہو گی

نئی دہلی(ہرپل نیوزایجسنی)4 فروری:۔ مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے نیٹ ورک 18 گروپ کے ایڈیٹر ان چیف راہل جوشی کو دیے خصوصی انٹرویو میں یوپی کی سیاست میں اپنا رول واضح کیا۔ یوپی میں اقتدار میں آنے پر وزیر اعلی کے عہدے کی دعویداری کے سوال پر راج ناتھ نے بڑی صاف گوئی سے کہا کہ میں ملک کا وزیر داخلہ ہوں۔ اب وزیر اعلی بنوں گا تو دوسروں کے ساتھ ناانصافی ہو گی۔ پاکستان میں ہوئے سرجیکل اسٹرائک کے بعد پہلی بار کسی ٹی وی چینل کو دئیے انٹرویو میں انہوں نے داؤد ابراہیم سے لے کر حافظ سعید تک کے سوالات کے بیباکی سے جواب دیئے۔نیٹ ورک 18 کو دیئے خصوصی انٹرویو میں انہوں نے یوپی کے لئے سماج وادی پارٹی۔ کانگریس اتحاد کو اپنا اہم حریف بتایا۔ انہوں نے کہا کہ میرا خیال ہے کہ یوپی میں بی جے پی کو 250 سے کم سیٹ نہیں ملے گی۔ مجھے یقین ہے کہ یوپی میں بی جے پی کو مکمل اکثریت ملے گی۔  یوپی میں بی جے پی تمام سیٹوں پر الیکشن لڑ رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ یوپی میں بی جے پی مکمل اکثریت کی حکومت بنائے گی۔ کئی انتخابات میں بی جے پی نے وزیر اعلی امیدوار پروجیکٹ کیا ہے۔ بی جے پی اب تک کئی ریاستوں میں بغیر چہروں کے انتخابات لڑی ہے۔ یوپی میں بی جے پی ضرور جیتے گی۔ اب بی ایس پی اور ایس پی۔ کانگریس اتحاد میں سے ایک طے کرے کہ کون بی جے پی حکومت کے اپوزیشن میں ہوگا۔

ایس پی۔ کانگریس اتحاد سے ملائم پریشان

ایس پی اور کانگریس اتحاد کے سوال پر انہوں نے کہا کہ یوپی کے عوام سب جانتی ہے۔ جس سماج وادی پارٹی کو مضبوط کرنے کے لئے ملائم سنگھ جی نے اتنے سالوں سے محنت کی، اب اس کی یہ حالت ہو رہی ہے۔ انہوں نے خود کہا تھا کہ اس پارٹی نے ملک کو لوٹا ہے۔

بیٹے پنکج سنگھ کو ٹکٹ ملنے پر دی صفائی

اپنے بیٹے پنکج سنگھ کو ٹکٹ ملنے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ پنکج کو پارٹی 2007 میں ہی ٹکٹ دے رہی تھی۔ اٹل اور اڈوانی جی نے پنکج کا نام پرپوز کیا تھا۔ انہوں نے اپنی رائے دیتے ہوئے کہا کہ رہنماؤں کے بچوں کو کم سے کم 10 سال تک پارٹی میں کام کرنا چاہئے۔ بی جے پی اپنے کارکنوں کے تئیں پوری طرح چوکنا ہے۔ کوئی بھی سیاسی پارٹی اپنا دروازہ بند کر کے نہیں رکھتی ہے۔

رام مندر بی جے پی کے لئے سیاسی مسئلہ نہیں

رام مندر پر انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے لئے یہ سیاسی مسئلہ نہیں ہے۔ بی جے پی سماج کو بانٹ کر سیاست نہیں کرتی ہے۔ یوپی کے کچھ اضلاع میں نقل مکانی کی خبروں پر انہوں نے کہا کہ نقل مکانی کرانے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ موجودہ ریزرویشن کے نظام سے کوئی چھیڑ چھاڑ نہیں کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ سماج وادی پارٹی کے خاندانی اختلاف سے اتر پردیش کے عوام کو نقصان ہوا ہے۔ لیکن یوپی کے عوام سیاسی طور پر اب بیدار ہیں۔ ملک میں غربت میں اضافہ کا کریڈٹ کانگریس کو جاتا ہے۔ یوپی میں قانون اور روزگار کو لے کر ابتر صورت حال ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/o9Ffm

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے