Breaking News
Home / اہم ترین / پانچ ریاستوں کے اسمبلی الیکشن میں ابھی ہوگی ووٹوں کی گنتی، سیکورٹی کے سخت انتظامات

پانچ ریاستوں کے اسمبلی الیکشن میں ابھی ہوگی ووٹوں کی گنتی، سیکورٹی کے سخت انتظامات

نئی دہلی(ایجنسی،ہرپل نیوز)11مارچ۔ پانچ ریاستوں اتر پردیش، اتراکھنڈ، پنجاب، گوا اور منی پور میں اسمبلی انتخابات اختتام پذیر ہو جانے کے بعد آج صبح  آٹھ بجے ووٹوں کی گنتی شروع ہوگی اور دوپہر تک یشتر نشستوں کے نتائج سامنے آ جائیں گے اور صورت حال واضح ہو جائے گی کہ کون سی پارٹی کس ریاست میں حکومت بنا سکتی ہے۔ ووٹوں کی گنتی کو دیکھتے ہوئے ان تمام ریاستوں میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کر دیے گئے ہیں اور ای وی ایم کے اسٹرانگ روم میں سیکورٹی کے خصوصی انتظامات کئے گئے ہیں اور ووٹوں کی گنتی کے مقامات پر تمام طرح کی سہولیات مہیا کرا دی گئی ہیں اور اس کے چاروں طرف سیکورٹی مستحکم کردی گئی ہے۔

 الیکشن کمیشن آف انڈیا کی ویب سائٹ پر آج  صبح آٹھ بجے سے پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات کے ووٹوں کی گنتی کے رجحانات اور نتائج ملنے لگیں گے۔ کمیشن نے ویب سائٹ پر انتخابات کے نتائج جاری کرنے کا پورا بندوبست کیا ہے۔ ملک بھر میں کوئی بھی شخص کہیں سے بھی کمیشن کی ویب سائٹ پر ان نتائج کو دیکھ سکتا ہے۔ اس کے علاوہ کمیشن نے اس بار بلاگ بھی بنایا ہے جہاں گزشتہ 2012 کے انتخابات سے موازنہ کرتے ہوئے تجزیہ پیش کیا گیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے اپنی مقبول ویب سائٹ ڈبليوڈبليوڈبليوڈاٹ ای سی آئی ريزلٹس ڈاٹ این آئی سی ڈاٹ ان کے توسط سے فروری مارچ 2017 میں ہوئے پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات کے ووٹوں کی گنتی کے رجحانات اور نتائج لوگوں تک پہنچانے کے لئے مضبوط اور مکمل طور پر محفوظ بنیادی ڈھانچہ تیار کیا ہے۔ اس ویب سائٹ کا اپنا ایک ریکارڈ ہے جس پر ایک دن میں بڑی تعداد میں 36 ملین سے 16 ارب ہٹس رجحان کے دوران ملے ہیں۔

اتر پردیش اسمبلی انتخابات کی ووٹوں کی گنتی سخت سیکورٹی انتظامات کے درمیان ہوگی اور آج  طے ہو گا کہ ریاست کی باگ ڈور اب کس پارٹی کے ہاتھ میں ہوگی۔ ریاست کے چیف الیکشن افسر کے دفتر کے مطابق ووٹوں کی گنتی صبح آٹھ بجے سے شروع ہوگی۔ شام تک تمام 403 نتائج آجانے کا امکان ہے۔ اس الیکشن کو 2019 میں ہونے والے لوک سبھا انتخابات کے سیمی فائنل کے طور پر دیکھا جا رہا ہے ۔ سات مراحل میں انتخابات 11 فروری سے شروع ہوکر آٹھ مارچ کو اختتام پذیر ہوئے ہیں۔ اس کے علاوہ دیگر ریاستوں میں بھی اسی طرح کے بندوبست کئے گئے ہیں۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/iuDhk

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے