Breaking News
Home / اہم ترین / پڈوبدری میں ہندو شدت پسندوں کی غنڈہ گردی۔معمولی بات کا بنایا بتنگڑ۔ مسجد پر پتھراؤ اورانہدام کی دھمکی۔ پولیس تماشائی؟

پڈوبدری میں ہندو شدت پسندوں کی غنڈہ گردی۔معمولی بات کا بنایا بتنگڑ۔ مسجد پر پتھراؤ اورانہدام کی دھمکی۔ پولیس تماشائی؟

پڈوبدری(ہرپل نیوز)27فروری: دوروزقبل لاری کا ہارن بجانے کو لیکر  اقلیتی طبقے کی دو نوجوانوں کی جانب سے لاری ڈرائیور کی مبینہ پٹائی کے واقعہ کے بعد  پڈوبیدری میں ہندو جاگرن ویدیکے کے کارکنان نے  ان مسلم نوجوانوں کی گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہوئے سخت احتجاج کیا ۔ بتایا گیا ہے کہ اس معاملہ کو آپسی رضامندی سے حل کر لیا گیا تھا  لیکن اس کے باوجود بھی  ہندو جاگرن ویدیکے کے کارکنان  ان کی گرفتاری پر اڑے رہے ذرائع کے مطابق  ہندو جاگرن ویدیکے کے کارکنان   ۔نے سنیچر کی رات پولس تھانہ میں گھس پیٹ کی کوشش کی  اور کل  دوبارہ راستہ روک کرمقامی  مسجد پر پتھراؤ  کیا ۔ اتوار کی صبح 10بجے ہندوجاگرن ویدیکے کے سیکڑوں کارکنان جمع ہوکر پڈوبیدری پولس تھانے کا گھیراؤکرتےہوئے دوبارہ  ملزم کے گرفتاری کامطالبہ کرنے لگے  تو یہاں مشتعل افراد اور پولس کے درمیان پھر لفظی جھڑپ شروع ہوگئی ۔جس کے بعد ہندو جاگرن ویدیکے کے لوگوں نے اچانک قومی شاہراہ پر پہنچ کر شاہراہ کے درمیان بیاریکیڈ  اور بڑے بڑےپتھر رکھ کر راستہ روک دیا۔ اس دوران 15منٹ سے زیادہ وقت تک قومی شاہراہ پر ٹرافک بند رہی ۔  بتایا گیا ہے کہ مبینہ طور پر یہی کارکن بعد میںایک مقامی جامع مسجد پر پتھراؤ کیا۔  جس کے بعد پولیس نے ان کواپنی تحویل میں لیا۔پولس تھانے کا گھیراؤ  کرنے کے باوجود ان کی گرفتاری نہ کرنےاور خامو ش تماشائی بنے رہنے کی وجہ سے   لوگ اسےپولیس کی ناکامی قرار دے  رہے ہیں ۔ مسجد انتظامیہ نے شکایت  کر کے  اس معاملے میں ملوث افراد کو گرفتار کرنے اور اُن کے خلاف سخت قانونی کاروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/4YbYQ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے