Breaking News
Home / اہم ترین / ڈائری مسئلہ یڈیورپا کی سیاسی سازش۔ سابق وزیراعلیٰ ملک کے سب سے بڑے جھوٹے:سدارامیا کا جوابی حملہ

ڈائری مسئلہ یڈیورپا کی سیاسی سازش۔ سابق وزیراعلیٰ ملک کے سب سے بڑے جھوٹے:سدارامیا کا جوابی حملہ

بنگلورو(ایس او نیوز,ایجنسی)1مارچ:وزیراعلیٰ سدارامیا نے آج الزام لگایا ہے کہ ڈائری کا مسئلہ بی جے پی کے ریاستی صدر بی ایس یڈ یورپا کی اختراع کردہ سیاسی سازش ہے، اور ان الزامات کے پس پردہ کوئی حقیقت نہیں ہے ۔انہو ں نے کہاکہ یڈ یورپا اب تک کے ملک کے سب سے بڑے جھوٹے ہیں، ان پر لگائے گئے الزامات کو ثابت کرنے دیجئے ۔ وہ ایک اور ڈائری کے مسئلہ پر کیوں اظہار خیال نہیں کررہے ہیں، جس کے بارے میں ان کی پارٹی کے رفیق لہر سنگھ نے تفصیلات بتائی ہیں۔ کابینہ کی میٹنگ کے آغاز سے پہلے صحافیوں کے سوال کا جواب دیتے ہوئے سدارامیا نے کہا کہ رکن کونسل کے گوند راج نے پہلے ہی تردید کی ہے کہ یہ ڈائری ان کی نہیں ہے اور یہ تحریر ان کی نہیں ہے ۔ ڈائری کے بارے میں روزانہ تذکرہ کرتے ہوئے وہ یہ ثابت کرنے کی کوشش کررہے ہیں کہ وہ صحیح ہیں لیکن جھوٹ کبھی سچ نہیں بن سکتا حالانکہ اسے ہزار بار کیوں نہ دہرایا جائے ۔انہیں یہ بات سمجھنی چاہئے ۔ یہ الزام بے بنیاد ہے اور وہ کانگریس پارٹی کی شبیہہ کو خراب کرنے کی کوشش کررہے ہیں لیکن یدی یورپا اس میں کامیاب نہیں ہوں گے ۔بنگلورو کی ترقی کے وزیر کے جے جارج نے ان الزامات کے ثابت ہونے پر عہدہ چھوڑنے کی پیشکش کی ہے ۔ انہو ں نے مزید کہاکہ یڈ یورپا نے الزام لگایا ہے کہ اسٹیل بریج کے کنٹراکٹر کو مسٹر رامیاسے 65کروڑ روپے کی رشوت لی ہے ۔ اس کنٹراکٹر کا نام منظر عام پر لانے دیجئے اور اسے ثابت ہونے دیجئے ۔ میں کرسی پر نہیں رہوں گا۔وزیر صحت و خاندانی بہبود رمیش کمار نے کہا کہ یڈ یورپا کو ذمہ داری کا رویہ اختیار کرنا چاہئے کیو ں کہ وہ ایک سابق وزیراعلیٰ ہیں اور یہ بات بخوبی جانتے ہیں کہ ملک میں دستور ہے اورہر کسی کو اس پر عمل کرنا چاہئے ۔ انہوں نے مزید کہا "آئی ٹی ڈپارٹمنٹ کو دستور کی خلاف ورزی کرنے والوں پر چھاپے کا حق ہے اور پتہ لگائی گئی اشیاء ضبط کرنے کا حق ہے ۔آئی ٹی ڈپارٹمنٹ کو یہ تصدیق کرنے دیجئے کہ یہ ڈائری چھاپے کے دوران ضبط کی گئی ہے اور اسے یدی یورپا کے حوالے کیا گیا تھاتب نہ صرف میں بلکہ سدارامیا سے بھی خواہش کروں گا کہ وہ وزیراعلی کا عہدہ چھوڑدیں

The short URL of the present article is: http://harpal.in/smaoV

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے