Breaking News
Home / اہم ترین / کرناٹک میں آئندہ انتخابات میں بی جے پی اقتدار پر قبضہ جمائے گی. یکتا کنونشن کے موقع پر امیت شاہ نے کیا دعوی

کرناٹک میں آئندہ انتخابات میں بی جے پی اقتدار پر قبضہ جمائے گی. یکتا کنونشن کے موقع پر امیت شاہ نے کیا دعوی

بنگلورو۔28 نومبر(ہرپل نیوز) آنے والے اسمبلی انتخابات کے پیش نظر پسماندہ اور بچھڑے طبقات کو اپنی جانب راغب کرنے کے مقصد سے بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی) نے شہرکے پیالس گراؤنڈ میں ’’ایکتا کنونشن‘‘ کا انعقاد کیا۔’’ایکتا کنونشن‘‘ کا افتتاح کرنے کے بعد بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ نے مرکزی حکومت کی ڈھائی سالہ کارکردگی پر روشنی ڈالی اور ریاستی کانگریس حکومت کو رشوت خور اور بدعنوان قرار دیا ۔ انہوں نے کہاکہ ریاست میں دوبارہ بی جے پی کو برسراقتدار لانے پر ابھارا اور ریاست کو مزید ترقی یافتہ ریاست کے طورپر پیش کرنے میں کوئی کسر باقی نہ رکھنے کا عندیہ دیا اور کہا کہ آئندہ انتخابات میں کرناٹک میں دوبارہ برسراقتدار آئے گی۔امیت شاہ نے وزیراعظم نریندر مودی کی زیرقیادت بی جے پی حکومت سے جاری 54 عوامی مفادات کے پروگرامس اوراسکیموں کے متعلق تفصیلات پیش کرتے ہوئے حکومت پر الزام لگایا کہ وہ مذکورہ اسکیموں کو ریاستی عوام تک پہنچانے میں ناکام رہی ہے ۔اس کا اصل مقصد مرکز کو بدنام کرنا ہے ۔ کالے دھن کے متعلق بی جے پی قومی صدر نے کہا کہ وزیراعظم نریندرمودی نے 500 اور 1000 کے پرانے نوٹ کے استعمال پر پابندی لگاکر کالادھن کو ختم کرنے اورملک سے رشوت خوری اوربدعنوانیوں سے پاک کرنے کی تحریک شروع کی ہے ۔اس سے چند دنوں کے لئے پریشانی ہوگی لیکن یہ اقدام آنے والے دنوں میں کالادھن اورنقلی نوٹ کو ختم کرنے میں معاون ثابت ہوگا۔ملک کی 125 کروڑ عوام وزیر اعظم کے اس اقدام کی بھرپور تائید کی ہے ۔لیکن اس کے خلاف پیرکو اپوزیشن پارٹیوں سے تعاون کی بجائے ’’آکروش دیوس‘‘ کا اعلان کیا ہے ۔ بہارکے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے کالادھن کی لڑائی میں وزیراعظم کے اس اقدام پر تائید کا جو اعلان کیا ہے اس کے لئے پارٹی ان کی مشکور ہے ۔امیت شاہ نے کہا کہ مرکزی حکومت نے درج فہرست وقبائل بچھڑے طبقات ، کسانوں اورغریبوں کی فلاح وبہبودی کو اولین ترجیح دیتے ہوئے ان کے لئے کار آمد اسکیمیں جاری کی ہیں جس سے استفادہ کرکے وہ اپنی معاشی اور اقتصادی حالت میں سدھار لانے لگے ہیں لیکن ریاستی حکومت مذکورہ اسکیموں کو مذکورہ طبقات تک پہنچانے میں پوری طرح ناکام رہی ہے ۔ امیت شاہ نے کہا کہ ریاست میں اگلے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی برسراقتدار ضرور آئے گی جس کے بعد ریاست میں دوبارہ تعمیری اورفلاحی کاموں کا آغاز ہوگا۔ انہوں نے بتایا کہ وزیراعظم نے مدرا بینک اسکیم کے تحت 4کروڑ نوجوانوں کو قرضے جاری کئے ہیں جس سے حاصل کرکے نوجوان برسرروزگار بنیں ان میں سے 60 فیصد کمزور اورپچھڑے طبقات کے نوجوان شامل ہیں۔قبل ازیں بی جے پی کے ریاستی صدر وسابق وزیراعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا نے کہا کہ ریاست میں کانگریس حکومت سے عوام کافی ناخوش ہیں ۔اس لئے اس حکومت کو برسراقتدار آنے سے دور رکھنے کے لئے ابھی سے منصوبہ بندی کرلی گئی ہے ۔انہوں نے ریاستی حکومت پر الزام تراشی کرتے ہوئے کہاکہ سدارامیا کی زیر قیادت ریاستی حکومت کے دور اقتدار کے دوران کوئی بھی ترقیاتی کام نہیں ہوپایا ہے۔ جس کے نتیجے میں ریاستی عوام بی جے پی کی جانب راغب ہونے لگی ہے ۔کنونشن میں مرکزی وزراء ،اننت کمار، ڈی وی سدانندگوڈا، رمیش جگ جینی ،سابق وزیراعلیٰ جگدیش شٹر، اراکین پارلیمان پی سی موہن،شوبھاکرندلاجے، پرتاپ سمہا، سابق ونائب وزیراعلیٰ آراشوک ،ایشورپا، ریاست کے بی جے پی نگران کار مرلی دھر راؤ، پرہلادجوشی سمیت پارٹی کے دیگر اعلیٰ لیڈران، اراکین اسمبلی وکونسل کے علاوہ بڑی تعداد میں پارٹی کارکن موجود تھے ۔قبل ازیں آراشوک نے بی جے پی یوامورچہ کی جانب سے نکالی گئی موٹر سائیکل ریلی کو ہری جھنڈی دکھائی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/A6ZbV

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے