Breaking News
Home / اہم ترین / کنداپورمیں اخلاقی پولس گری کا تازہ واقعہ ؛ اے بی وی پی کارکن نے کیا مسلم طالب العلم پر حملہ

کنداپورمیں اخلاقی پولس گری کا تازہ واقعہ ؛ اے بی وی پی کارکن نے کیا مسلم طالب العلم پر حملہ

کنداپور 3/ اکتوبر (ہر پل نیوز) یہاں کی ایک کالج اسٹوڈینٹ کو اُسی کے کلاس کی طالبہ کے سوال کا جواب دینا اُس وقت مہنگا پڑگیا جب مبینہ طور پر اخلاقی پولس گری کرنے والے کچھ غنڈوں نے مسلم لڑکے کے ساتھ گالی گلوچ کرتے ہوئے اُسے پاکستان جانے کی دھمکی دیتے ہوئے حملہ کردیا۔

ساحل آن لائن سے فون پر گفتگو کرتے ہوئے کنداپور اسپتال میں ایڈمٹ مسلم طالب العلم عاکف نے بتایا کہ وہ امتحان سے فارغ ہوکر کالج سے باہر نکلا ہی تھا کہ اُسی کے کلاس میں پڑھنے والی ایک لڑکی نے اُسے امتحان کی تعلق سے دریافت کیا کہ آج کا امتحان کیسا گیا، جب عاکف نے اُسے جواب دیا تو لڑکی وہاں سے چلی گئی، جس کے فوراً بعد اے بی وی پی کے پانچ چھ لڑکے اس کے پاس آگئے اور سوال پوچھا کہ وہ کالج کی ہندو لڑکی سے کیوں بات کررہا تھا، جب عاکف نے اُنہیں بتایا کہ وہ اُسی کے کلاس میں پڑھتی ہے اور صرف امتحان کے تعلق سے اُس نے پوچھا تھا تو اُن میں سے ایک جس کی شناخت شری کانت شیروگار (20) کی حیثیت سے کی گئی ہے، نے اس کی پیٹائی شروع کردی۔ عاکف کا کہنا ہے کہ شری کانت نے اُسے پاکستان بھیجنے کی دھمکی دیتے ہوئے مارنا شروع کیا۔

۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ مارپیٹ کی پوری واردات کالج کے باہر لگے سی سی ٹی وی کیمرے میں قید ہوگئی ہے جہاں سے فوٹیج لیکرکیمپس فرنٹ آف انڈیا کے کارکنوں نے پہلے عاکف کو مقامی اسپتال میں داخل کروایا پھر کنداپور پولیس کوواقعے کی خبر کی۔بتایا گیا ہے کہ کمپس فرنٹ آف انڈیا کے کارکنوں نے کنداپور پولس تھانہ پہنچ کر سی سی ٹی وی فوٹیج دکھاتے ہوئے اے بی وی کارکن شری کانت کے خلاف شکایت درج کی ہے۔ کمپس فرنٹ آف انڈیا کے کنداپورتعلقہ صدر فہد نے بتایا کہ عاکف کی پیٹائی کرنے کے بعد شری کانت فرار ہوگیا ہے۔ فہد کے مطابق شری کانت اس سے پہلے بھی کسی نہ کسی بہانے سے کالج کے مسلم لڑکوں کی پیٹائی کرچکا ہے، مگر ہمیشہ معاملہ کو دبایا جاتا ہے، مگر اس بار ہم اُسے سزا ضرور دیں گے۔ اس نے بتایا کہ پولس نے ہم لوگوں کو بھروسہ دلایا ہے کہ وہ کل منگل صبح تک فرار شدہ شری کانت کو گرفتار کریں گے۔ فہد نے متنبہ کیا کہ اگر شری کانت کو فوری گرفتار کرکے اُس کے خلاف سخت قانونی کاروائی نہیں کی گئی تو کیمپس فرنٹ آف انڈیا کنداپور میں سخت احتجاج کرے گی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/gkIlZ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے