Breaking News
Home / اہم ترین / گئو رکشوں کے مظالم سے پریشان 15 ہزار دلتوں کا تبدیلی مذہب کا اعلان ، 500 لوگوں نے بھرے فارم

گئو رکشوں کے مظالم سے پریشان 15 ہزار دلتوں کا تبدیلی مذہب کا اعلان ، 500 لوگوں نے بھرے فارم

(بنارسنكاٹھا ہرپل نیوز،۔ایجنسی)30 جولائی : گزشتہ دنوں گجرات کے اونا میں دلتوں کے ساتھ غیر انسانی رویے سے دلت انتہائی ناراض ہیں ۔ دلت برادری جہاں اتوار کو اس واقعہ کے خلاف احمد آباد میں مہاسمیلن کر رہی ہیں ، وہیں بناسنكاٹھا ضلع کے 15 ہزار دلتوں نے مذہب تبدیل کرنے کی دھمکی دی ہے ۔ اب تک 500 لوگوں نے فارم بھی بھر دیا ہے ۔ یہ تمام بودھ مذہب اپنانے کی بات کہہ رہے ہیں ۔ اس خبر ے انتظامیہ میں افرا تفری مچ گئی ہے ۔واضح رہے کہ گجرات میں دلت نوجوانوں کو وحشیانہ طور پر پیٹا گیا تھا ، جس کے بعد گجرات سمیت پورے ملک میں ہنگامہ مچ  گیا تھا اور اب اس کے نتیجہ بھی دکھائی دینے لگے ہیں ۔ لوگ ہاتھوں میں فارم لے کر طویل قطار میں کھڑے نظر آئے ۔  یہ لوگ تبدیلی مذہب کیلئے فارم بھرنے آئے تھے ۔اب تک بناسنكاٹھا میں تقریبا 500 سے زیادہ دلتوں نے تبدیلی مذہب کے فارم بھی بھر دیے ہیں ۔ ان کی تنظیم کا دعوی ہے کہ آنے والے دنوں میں ان کی تعداد ہزاروں میں ہوگی ۔ یہ لوگ فارم بھر کر کلیکٹر اور گورنر سے تبدیلی مذہب کی اجازت مانگ رہے ہیں ۔ خیال رہے کہ گجرات میں تبدیلی مذہب کے لئے سخت قانون ہے ۔ مذہب تبدیل کرنے کے لئے پہلے کلکٹر کو عرضی دینی پڑتی ہے ، جسے بعد میں حکومت کو بھیجا جاتا ہے اور حکومت اس پر فیصلہ لیتی ہے ۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/ktDPb

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے