Breaking News
Home / اہم ترین / ہندوستان کی عدالتوں میں 6 لاکھ معاملےزیر التوا

ہندوستان کی عدالتوں میں 6 لاکھ معاملےزیر التوا

ممبئی (ہرپل نیوز،ایجنسی)12ڈسمبر۔گزشتہ برس 2016 تک ملک کی 24 اعلی ٰ عدالتوں میں 40.15 لاکھ معاملے تصفیہ کئےلئے زیر التوا ہیں۔ ان میں سے دس سال سےبھی زیادہ عرصہ سے زیر التوا معاملوں کی تعداد 19.45 فیصد ہے۔بمبئی ہائی کورٹ سمیت ملک کی مختلف اعلیٰ عدالتوں میں تقریباً 6لاکھ معاملے ایک دہائی سے زیادہ عرصہ سے زیر التوا ہیں ۔ ان میں تقریباً ایک لاکھ معاملے ممبئی ہائی کورٹ میں ہیں۔ ایک نگرانی نظام کے ذریعے جمع اعداد و شمار میں یہ حقیقت سامنے آئی ہے۔سال 2016 کے آخر میں ملک کی 24 اعلی عدالتوں میں کل 40.15 لاکھ معاملے پڑے تھے۔ ان میں بھی تمام نپٹارے کے لئے پڑے معاملوں میں سے دس سال سے زیادہ وقت سے تصفیہ کے لئے پڑے معاملوں کی تعداد 19.45 فیصد ہے۔قومی عدالتی ڈاٹا گریڈ کے پاس دستیاب اعداد و شمار کے مطابق سات دسمبر تک 20 اعلیٰ عدالتوں میں 5،97،650 معاملے ایک دہائی سےزیادہ عرصہ سے تصفیہ کے لئے زیر التوا تھے۔

واضح ہو کہ ملک میں 24 ہائی کورٹ ہیں جن میں الہ آباد ہائی کورٹ کے اعداد و شمار دستیاب نہیں ہو پائے ہیں۔ بمبئی ہائی کورٹ میں 1،29،063 معاملے زیر التوا ہیں۔ اس فہرست میں دوسرے مقام پر ہے پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ جہاں کل 99،625 معاملے زیر التوا ہیں۔ کلکتہ ہائی کورٹ میں 74،315 معاملے زیر التوا ہیں۔سابق چیف جسٹس ٹی ایس ٹھاکرنے کہا تھا کہ التوا میں پڑے کیسوں کا تیزی سےنمٹارے کے لئے مذید ججوں کی تقرری درکار ہے۔لیکن ایسا تاحال نہیں ہو پایا۔اس طرح سے بھارت میں عام عوام کو عدالتوں کے چکر کاٹنے پر مجبور کیا جارہا ہے،اورہزاروں کیس مزید التوا میں پڑتے جارہے ہیں۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/6P44S

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے