Breaking News
Home / اہم ترین / ہندو دہشت گردی کے متعلق کمل ہاسن کے بیان پر ہندو تنظیموں کا شدید ردعمل ۔کمل ہاسن کو گولی مار دینی چاہئے: ہندو تنظیم رہنما کا بیان

ہندو دہشت گردی کے متعلق کمل ہاسن کے بیان پر ہندو تنظیموں کا شدید ردعمل ۔کمل ہاسن کو گولی مار دینی چاہئے: ہندو تنظیم رہنما کا بیان

لکھنؤ(ہرپل نیوز،ایجنسی)4نومبر۔آل انڈیا ہندو مہاسبھا کے سینئر لیڈر نے مشہور تامل اداکار کمل ہاسن کی طرف سے 'ہندو دہشت گردی' پر دئے گئے بیان کے لئے کہا کہ اس طرح کے لوگوں کو 'گولی مار دینی چاہئےہاسن کی طرف سے ایک ہفتہ میگزین میں ہندو دہشت گردی کو لے کر دیے بیان کی طرف اشارہ کرتے ہوئے جنرل اسمبلی کے لیڈر پنڈت اشوک شرما نے کہا اس طرح کے لوگ اپنے جانبدار سپرادايك ایجنڈے کے تحت ہندوتو ماننے والوں کا تعلق ہندو دہشت گردی سے جوڑتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ کمل ہاسن جیسے لوگوں سے نمٹنے کے لئے پھانسی پر چڑھا دینے یا گولی مار دینے کے علاوہ اور کوئی راستہ نہیں ہے

کمل ہاسن کے بیان سے ناراض تنظیم کے قومی نائب صدر شرما نے کہا، "جو بھی لوگ اس طرح کے الفاظ استعمال کرتے ہیں یا ہندو مذہب عقیدے سے متعلق غیر جانبدار رویہ اپناتے ہیں، انہیں جینے کا کوئی حق نہیں ہےجنرل اسمبلی رکن نے 62 سالہ اداکار کی تمام فلموں اور ان کے خاندان کے ارکان کی بھی تمام فلموں کا بائیکاٹ کرنے کا اعلان کیا ہے. کمل ہاسن کی بیٹی شروتی ہاسن ہندی فلموں میں کام کرتی ہے. تنظیم نے اور لوگوں سے بھی اس طرح کے لوگوں کی فلموں کے بائیکاٹ کرنے کو کہا ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/UAv5W

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے