Breaking News
Home / اہم ترین / یادگیرکے معروف ولی حضرت سید شاہ یعقوب بخاری قادری ؒ تحریر: سید ساجد حیات یادگیر

یادگیرکے معروف ولی حضرت سید شاہ یعقوب بخاری قادری ؒ تحریر: سید ساجد حیات یادگیر

s-s-hayatشمال سے جنوب ہو یا مشرق سے مغرب ملک کے کو نے کو نے میں ہر جگہ جگہ اولیائے اکرام مو جود ہیں، اولیائے اکرام اللہ تعالی اور اسکے رسول حضرت محمد ؐ کی رضا کیلئے دور دراز مقامات سے سفر کر تے ہو ئے اپنی منزل پر پہو نچ کر دین کی اشاعت کے کام میں لگے رہے ، ا و لیائے اکرام بو ریا نشین دنیا کی ہر نعمت کو ٹھکرا دیتے ہیں، اور انکی خانقاہوں میں با دشاہ وقت بر ہنہ پا حاضر ہو تے ہیں، اور اسی لئے اللہ تعالی ان کی دعاؤں سے حاجت مندوں کی جھولیاں مرادوں سے بھر دیتا ہے، انکے ہاتھ ہمشہ اللہ تعالی کے حضور میں دوسروں کیلئے پھیلتے ہیں، علاقہ دکن میں اولیائے اکرام کی کثیر تعداد ہے، جنوبی ہند کی ریاست کر نا ٹک کے شمالی حلقہ کے علاقہ حیدرآباد کر ناٹک کا ضلعی مر کز وتا ریخی شہر یادگیر بھی اولیائے اکرام کا مر کز رہاہے، یہاں تقریبا اولیائے اکرام کے اعراس شریف نہایت ہی عقیدت و احترام کے ساتھ منائے جا تے ہیں، شہر کے مر کزی مقام سٹی میو نسپل کو نسل کے قریب صدر درازہ کے قلب میں واقع حضرت سید شاہ یعقوب بخاری قادری ؒ کا بر سہا برس سے منا یا جا نے والا سالانہ عرس اپنا ایک منفرد مقام رکھتا ہے، شہر میں اس آ ستانہ کو گنگا جمنی تہذیب کا مر کز کہا جا تا ہے، جہاں صدیوں سے عقیدت مندوں میں صرف مسلمان ہی نہیں بلکہ غیر مسلمانوں کی کثیر تعدادشریک ہوتی ہے ۔ کیا امیر کیا غریب بلا لحاظ مذہب و ملت بچے بوڑھے جوان ان کے آ ستانے پر حاضر ہو تے ہیں، کم سے کم پندرہ دنوں تک چلنے والے عرس کی سہ روزہ تقاریب آ غازہر سال 15 ربیع الاول سے ہو تا ہے، عرس شریف کے موقع پر احاطہ درگاہ میں بہت بڑی تعداد میں میلہ کے طور پر مختلف اقسام کے اشیاء کی دوکانیں لگتی ہیں، نمائش میں اسٹال لگا نے والے تاجرین یادگیر کے علاوہ گلبرگہ ، رائچور، حیدرآباد ،اور دیگر مقامات سے آ تے ہیں، شہر کا واحد مر کز ہے جہاں عرس کے موقع پر اتنی بڑی تعداد میں مختلف اقسام کے اشیاء کی دوکانوں کی نما ئش کا اہتمام ہو تا ہے، جس میں ہزاروں کی تعداد میں عوام شرکت کر تے ہیں، عرس حضرت سید شاہ یعقوب بخاری قادری ؒ کی شروعات15 ربیع الاول کو صندل شریف سے ہو تی ہے، اس دن بعد نماز مغرب شہر کے مختلف مسلم محلوں سے عقیدت مند وں کی ایک بڑی تعداداپنے اپنے گھروں سے ہا تھوں میں مشعل لئے درگاہ پہو نچتی ہے،اور یہ سلسلہ بعد نماز عشاء تک بھی جاری رہتا ہے ،دور قدیم میں صندل مبارک میں سجا ے سجائے اونٹ اور گھوڑے اپنی شان و شوکت سے آگے بڑھتے رہتے، مگر اونٹ اور گھوڑے گذشتہ چند سالوں سے صندل کا حصہ نہیں رہ رہے ہیں، اور جن راستوں سے جلوس صندل کا گذرہو تا ہے عوام کی کثیر تعداد اسے دیکھنے کیلئے جگہ جگہ جمع رہتی ہے،صندل مبارک کی ایک اہم روایت یہ بھی ہے کے صندل مبارک میں غیر مسلم بھی مشعلوں کے ساتھ کثیر تعداد میں شامل رہتے ہیں، مسلم محلہ جات کے نوجوان اپنی اپنی غلاف مبارک کے ساتھ صندل میں شریک ہو تے ہیں، جلوس شہر کی اہم شاہراوں سے ہو تا ہوا، رات دیر گئے آستانہ کو پہونچتا ہے، صبح صادق فجر کی اذان سے پہلے پہلے صند ل ما لی کی رسم ادا کی جا تی ہے، صلواۃ السلام و فا تحہ و دوردو دعا کا اہتمام ہو تا ہے ، 16ربیع الاول کو جشن چراغاں کے موقع پر انتظامی کمیٹی درگاہ شریف کی جانب سے جلسہ عظمت اولیاء منعقد کیا جا تا ہے ،جشن چراغاں پر محفل سماع ، قوالی کا پروگرام، بھی منعقد ہو تاہے، 17 ربیع الاول کو زیارت مبارک کے موقع پربعد نماز فجر قران خوانی، فا تحہ خوانی، صلوۃ السلام و دعا کے بعد تناول و طعام کا اہتمام ہر خاص و عام کیلئے برسہابرس سے کیا جا رہا ہے، شہر میں آ ستانہ حضرت سید شاہ یعقوب بخاری قادری ؒ کے نام سے مسجد ، عربی مدرسہ، محلہ، چوارہا، قبر ستان اور دیگر بھی یادگاریں بھی مو سوم ہیں، اوراس سال درگاہ حضرت سید شاہ یعقوب بخاری قادری ؒ کا 554 سالانہ عرس شریف منا یا جا رہا ہے،۔

نوٹ : مضمون نگار کی اپنی رائے ہے اس سے ہرپل آن لائن کا اتفاق ضروری نہیں ہے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/IB22d

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے