Breaking News
Home / اہم ترین / یلاپور کانگریس لیڈرپرمود ہیگڈے اور کمٹہ کے سابق ایم ایل اے دناکرشٹی کی بی جے پی میں شمولیت۔ 15؍دنوں کے اندر مزید کئی لیڈروں کی شمولیت متوقع:ایڈی یورپا کا دعوی

یلاپور کانگریس لیڈرپرمود ہیگڈے اور کمٹہ کے سابق ایم ایل اے دناکرشٹی کی بی جے پی میں شمولیت۔ 15؍دنوں کے اندر مزید کئی لیڈروں کی شمولیت متوقع:ایڈی یورپا کا دعوی

بنگلورو،کمٹہ،بھٹکل :(ہرپل نیوز،ایجنسی)28؍فروری: بی جے پی میں شامل ہونے کے لئے ریاست میں اب دوسری پارٹیوں سے بے زار کئی لیڈر قطارمیں کھڑے ہیں اور اگلے 15؍دنوں کے اندر کئی ایک لیڈر باقاعدہ بی جے پی کی رکنیت حاصل کرنے والے ہیں۔ بی جے پی کے ریاستی صدر بی ایس ایڈی یورپا نے آج یہ دعویٰ کرتے ہوئے بتایاکہ کہ شمالی کرناٹک کے یلاپورسے سینئر کانگریسی لیڈرپرمود ہیگڈے،اور کمٹہ میں جے ڈی ایس کے سابق ایم ایل اے دناکرشٹی، کمٹا مینسپلٹی کے 8؍ممبرس بیدر کے ہومنتپا کری اور دیگر چند لیڈروں کی بی جے پی میں شمولیت کے سلسلہ میں منعقدہ پروگرام کے موقع پرایڈی یورپا نے دعویٰ کیاہے کہ جلد ہی سابق وزیر کمار بنگارپا سابق رکن اسمبلی پر پلانا گپا، اور اتر کنڑا ضلع کے بھٹکل اسمبلی حلقے کے سابق کانگریس ایم ایل اے جے ڈی نائک سمیت اور کئی اہم لیڈر بھی بی جے پی میں شامل ہونے والے ہیں۔ کئی پارٹیوں کے ناراض لیڈروں سے رابطہ میں ہیں جس کے نتیجہ میں شمالی کرناٹک میں بی جے پی کی طاقت مزید بڑھنے والی ہے۔ شمالی کرناٹک میں کانگریس اور جے ڈی ایس کا زوال شروع ہوچکاہے۔ اس موقع پر ایڈی یورپا نے کہاہے کہ گووند راج نے کانگریس ہائی کمان کو پہنچائی گئی بخشش کی تفصیلات ڈائری میں درج کرکے بی جے پی پر بڑا احسان کیا ہے اور یہ معاملہ اب اگر سی بی آئی کے حوالہ کیا جائے گا تو مزید کئی انکشافات اور کانگریس کے کالے کرتوت عوام کے سامنے آنے والے ہیں۔ اپنی ڈائری کے منظر عام پر آنے کے بعد گووند راج نے دہلی پہنچ کر وہاں کئی کانگریسی لیڈروں سے ملاقات کا سلسلہ شروع کردیاہے۔اس معاملہ کی جانچ کی جائے گی تویہ سچائی بھی سامنے آجائے گی۔ اس تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیر وشویشورہیگڈے کاگیری نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ شمالی کرناٹک ضلع کے لئے آج کا دن تاریخی دن ہے۔ اس ضلع سے 15؍اراکین اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔ بی جے پی سے منتخب ہونے والے وہ واحد رکن تھے۔ لیکن اب دوسری پارٹیوں کے لیڈروں کی بی جے پی میں شمولیت کے بعد ضلع کے تمام حلقوں سے بی جے پی امیدواروں کی کامیابی یقینی نظر آنے لگی ہے۔ اننت کمار ہیگڈے نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ضلع میں دناکرشٹی کی بی جے پی میں شمولیت کے بعد اب کمٹا منسپلٹی بی جے پی کے قبضہ میں آگئی ہے۔ پرمود ہیگڈے نے اپنے خطاب میں کہاکہ وہ اب بی جے پی میں شامل ہونے کے بعد دودھ میں تیل کی طرح نہیں بلکہ دودھ میں شکر بن کر پارٹی میں خود کو ڈھال لیں گے۔ ان کی یہ خواہش ہے کہ ایڈی یورپا کو ریاست کا اگلا وزیراعلیٰ بنایا جائے اوریہی مقصد ہے کہ انہوں نے بی جے پی کے ساتھ خود کو جوڑلیا ہے۔ دنا کرشٹی نے بھی کہاکہ جب وہ جنتا پریوار میں تھے تو خود کو رام کرشنا ہیگڈے کے ساتھ جوڑلیا تھا۔ اب نریندر مودی کے ہاتھ مضبوط کرنے وہ بی جے پی میں شامل ہورہے ہیں۔ جانکاروں کا ماننا ہے کہ دل بدلی کا یہ پورا سلسلہ آنے والے اسمبلی الیکشن کی تیاری کے طورپرجاری ہے۔ ۔بھٹکل کے رکن اسمبلی منکال ویدیا سے اس معاملہ میں جبسوال کیا گیا کہ کانگریس کے کچھ لیڈران بی جے پی میں کیوں شامل ہو رہے ہیں تو انہوں نے کہا کہ جولوگ بی جے پی میں شامل ہوگئے ہیں وہ در اصل بی جے پی کے ہی تھے۔اور انہوں نے کانگریس جوائن کیا تھا  اب اگر وہ بی جے پی میں واپس چلے گئے ہیں تو اس میں کوئی اچھنبے کی بات نہیں۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/asMAv

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے