Breaking News
Home / اہم ترین / یوگی حکومت میں مدارس کے برے دن۔ تقریبا 3000 مدارس کی منظوری رد کرنے کی تیاری میں ہے اترپردیش سرکار

یوگی حکومت میں مدارس کے برے دن۔ تقریبا 3000 مدارس کی منظوری رد کرنے کی تیاری میں ہے اترپردیش سرکار

لکھنو:(ہرپل نیوز،ایجنسی)16 اکتوبر۔ اترپردیش میں یوگی حکومت کے آنے کے بعد مدارس کی پریشانیاں بڑھتی ہی جارہی ہیں۔ یوگی حکومت کے مدارس کو آن لائن کرنے کے فرمان کی میعاد ختم ہونے کے بعد اب تقریبا 3000 مدارس پر خطرات کے بادل منڈلانے لگے ہیں۔ بتایا جارہا ہے کہ ان مدارس نے اپنا ڈیٹا آن لائن نہیں کیا ہے ، جس کی وجہ سے ان کے خلاف کارروائی کی تیاری کی جارہی ہے اور ان کی منظوری کو رد بھی کیا جاسکتا ہے۔اترپردیش مدرسہ بورڈ کے رجسٹرار راہل گپتا کے مطابق اس سے پہلے آن لائن کرنے کی میعاد میں ریاستی حکومت نے دو مرتبہ توسیع کی تھی اور آخری تاریخ 15 اکتوبر تھی ۔ اب رجسٹریشن بند ہوگیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس کارروائی میں حکومت سے امداد یافتہ سبھی 560 مدارس نے اپنے ڈیٹا کو آن لائن کردیا ہے۔

راہل گپتا کے مطابق ریاست میں تقریبا 19500 مدارس ہیں ، ان میں سے تقریبا 16500 مدارس نے اپنے ڈیٹا کو آن لائن کردیا ہے ، لیکن ابھی بھی ریاست کے تقریبا 3000 مدارس نے اپنا ڈیٹا کو آن لائن نہیں کیا ، جس کے خلاف اب کارروائی کی تیاری کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسے مدارس جنہوں نے اپنے ڈیٹا کو آن لائن نہیں کرایا ہے ، ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی اور ان کی منظوری کو رد کرنے کیلئے یوگی حکومت کو خط لکھا جائے گا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/AHe5f

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے