Home / اہم ترین / اردوکے نامور شاعرراحت اندوری کا انتقال ۔کرونا سے ہار گئے زندگی کی جنگ

اردوکے نامور شاعرراحت اندوری کا انتقال ۔کرونا سے ہار گئے زندگی کی جنگ

بھوپال ( ہرپل نیوز)11اگست :مشہور و معروف شاعر راحت قریشی عرف راحت اندوری (70)نے مدھیہ پردیش کے آربندو اسپتال میں اپنی آخری سانس لی یوں اردو کے نامور شاعر بھی اس وبا کی نذر ہو گئے ۔ آپ کو بتا دیں کہ ”کووڈ کی شروعاتی علامتیں نظر آنے کے بعد کل ہی ان کا کورونا ٹیسٹ کیا گیا تھاجس میں ان کی رپورٹ پازیٹو آئی ۔ بتایا گیا ہے کہ وہ کئی عوارض میں مبتلا تھے ۔راحت اندوری کے کورونا وبا میں مبتلا ہونے کی خبر سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر ان کی جلد صحت یابی کے لیے دعاؤں کا سلسلہ شروع ہو گیا تھا مگر ابھی شام کو وہ زندگی کی جنگ ہار گئے ۔

حکومتوں کو ان کی اوقات بتانے والے اس مشہور و معروف شاعر کی آج صبح ان کی تھوڑی طبیعت ناساز ہوئی تھی اس دوران انہیں پے درپے دل کے تین دورے پڑے، جس کے ساتھ ہی وہ خالق حقیقی سے جا ملے۔ ڈاکٹرس نے بتایا کہ ان کے دونوں پھیپھڑوں میں کورونا انفیکشن پھیل چکا تھا، جبکہ گردوں میں سوزش کے علاوہ سانس لینے میں بھی تکلیف ہورہی تھی۔ تاہم علاج شروع ہونے کے کچھ ہی گھنٹوں بعد دل کے مسلسل دورے پڑنے سے ان کا انتقال ہوگیا۔ان کے انتقال پر ادبی حلقے میں غم کی لہر دوڑ گئی ہے ۔ مانا جا رہا ہے کہ ان کے انتقال سے اردو شاعری کا ایک دور ختم ہو گیا ۔ راحت اندوری کی شاعری کی خصوصیت تھی کہ انہوں نے حاکم وقت کی غلط پالیسیوں پر شدید تنقید کی ہے ۔ کم و بیش نصف صدی تک انہوں نے اردو مشاعروں کو اپنی شاعری سے محظوظ کیا ۔اس کے علاوہ بھی انہوں نے سماج کے کئی مسائل کو اپنی شاعری کا موضوع بنایا ۔ ان کے انتقال سے اردو شاعری کا بڑا نقصان ہے ۔ راحت اندوری اردو مشاعروں کی آبرو سمجھے جاتے تھے ۔ وہ صرف شاعر نہیں بلکہ اردو کے ایک بڑا نام بھی تھے ۔ ان کے انتقال پر سیاسی ادبی اور سماجی حلاقوں کی معروف شخصیات نے گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے ۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/WxnJV

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.