Home / اہم ترین / اس لئے تین بچوں کے ساتھ بیت الخلا میں رہنے کو مجبور تھی عمر رسیدہ خاتون ۔یہاں پڑھیے دل دہلا دنیے والی داستان

اس لئے تین بچوں کے ساتھ بیت الخلا میں رہنے کو مجبور تھی عمر رسیدہ خاتون ۔یہاں پڑھیے دل دہلا دنیے والی داستان

نئی دہلی (ہرپل نیوز، ایجنسی) 16اکتوبر:اڑیسہ سے ایک دل دہلانے والی داستان سامنے آئی ہے۔ انگل ضلع کے کیشوری نگر ضلع کے بیسانا گائوں میں ایک بزرگ عورت تین بچوں کے ساتھ سوچھ بھارت مشن کے تحت بنایا گیا شوچالیہ (بیت الخلا)میں پچھلے دو مہینے سے رہ رہی تھی ۔ بچوںمیں دو لڑکیاں اور ایک لڑکا ہے۔ سبھی کم عمر کے ہیں۔دونوں لڑکیوں کی عمر 5اور 8سال ہے، وہیں لڑکے کی عمر 6 سال ہے ۔

تینوں بچے تین سال پہلے ماں کے انتقال کے بعد اپنی نانی بملا پردھان کے ساتھ رہنے کے لئے آئے تھے۔ ماں کی موت کے بعد ان کےوالد نے انہیں چھوڑ دیا تھا۔ پردھان پہلے ایک مٹی کے گھر میں رہتی تھی۔ وہ اپنا زیادہ تر وقت کام کی تلاش میں جنگل اور گائوں میں بھٹکتی ہوئے بتاتی تھی ۔ بزرگ عورت نے’دی انڈین ایکسپریس ‘کو بتایا کہ اس کے پاس کوئی زمین نہیں ہے۔ انہیں جہاں جگہ ملتی ہے ۔وہیں رہنے لگتی ہے۔لیکن اب وہ بوڑھی ہورہی ہے اور ایسا نہیں کرسکتی ۔پردھان نے کہا ’اب میرے ساتھ تین بچے بھی ہیں۔ اس سیزن میں بارش کے بعد، مٹی کا گھر برباد ہوگیا تھا۔ حال ہی میں شوچالیوں(بیت الخلا)کی تعمیر کی گئی تھی اور کوئی بھی ان کا استعمال نہیں کررہا تھا۔ اس لئے میں بچوں کے ساتھ وہاں رہنے لگی۔ ہم نے کھلےمیں کھانا بناتے ہیں اوررات کو بارش ہونے پر بچے اندر سو جاتے ہیں۔ ہمارے پاس اب اور کچھ نہیں ہے‘علاقائی ورکروں کی مداخلت کے بعد ’عورت اور اس کے بچوں کو بدھ کو عارضی طور پر پنچایت دفتر میں منتقل کردیا گیا ۔ اس کےبعد انہں عارضی سینٹر بھیج دیا جائے گا۔ یہ پوچھے جانے پرکہ کیا انہیں مدد کے لئے حکومت یا گرامین پنچایت سے رجوع کیا تھا۔بملا نے کہا ’وہ کاغذات مانگتے ہیں اور میرے پاس کوئی کاغذات نہیں ہیں۔ میں کام کی تلاش میں آگے گھومتی رہتی ہو ۔ لاک ڈائون کی وجہ سے ایک جکہ پھنس گئی ۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/yEPrq

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.