Home / اہم ترین / اعظم خان کی عبوری ضمانت کی درخواست ہائی کورٹ سے مسترد

اعظم خان کی عبوری ضمانت کی درخواست ہائی کورٹ سے مسترد

لکھنؤ :(ہرپل نیوز؍ایجنسی) 13؍جون:۔ سماج وادی پارٹی کے قدآور لیڈراور ممبر پارلیامنٹ اعظم خان کی لگاتار مشکلات بڑھ رہی ہیں۔واضح ہو کہ اتر پردیش جل نگم کی تقرریوں کے دھاندلی معاملہ میں سابق کابینہ کے وزیر اعظم خان کی عبوری ضمانت کی درخواست کو ہائی کورٹ کی لکھنؤ بنچ نے خارج کر دیا۔ جل نگم میں جس وقت دھاندلی ہوئی تھی، اعظم خان ریاست کے شہری ترقی کے وزیر تھے۔ اعظم خان کورونا وائرس سے متاثر ہو گئے تھے اور ان کا ایک نجی اسپتال میں علاج چل رہا ہے۔

ہائی کورٹ کی لکھنؤ بنچ نے جل نگم میں 1300 اسامیوں پر تقرریوں سے متعلق دھاندلی کے معاملہ میں اعظم خان کی عبوری ضمانت کی درخواست پر جمعہ کے روز سماعت کی۔ اس کے متعلق سے 25 اپریل 2018 کو اعظم خان کیخلاف لکھنؤ کے ایس آئی ٹی پولیس اسٹیشن میں تعزیرات ہند کی دفعہ 409، 420، 120 بی اور 201 کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔عدالت نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے سماعت کی۔

سینئر ایڈووکیٹ کپل سبل اور آئی بی سنگھ نے اعظم خان کی ضمانت کی پیروی کی۔ درخواست ضمانت کی مخالفت کرتے ہوئے سرکاری وکیل نے کہا کہ اعظم خان ضلع رام پور کے دو فوجداری مقدمات کے سلسلہ میں پہلے ہی جیل میں بند ہیں۔ 18 اپریل 2020 کو اس معاملے میں عدالت کے ذریعہ ان کے خلاف بی وارنٹ جاری کیا گیا ہے۔

19 نومبر 2020 کو یہ وارنٹ سیتا پور جیل میں اعظم خان نے حاصل کیا تھا۔ بنچ نے موقف اختیار کیا کہ موجودہ مقدمہ میں اعظم خان بی وارنٹ کی بنیاد پر تحویل میں ہیں، ایسی صورتحال میں عبوری ضمانت کا کوئی جواز نہیں رہ جاتا۔ عدالت نے یہ بھی کہا کہ موجودہ صورتحال میں ہائی کورٹ کے ذریعہ اعظم خان کی درخواست ضمانت پر غور نہیں کیا جا سکتا، تاہم وہ ضمانت کے لئے موزوں عدالت سے رجوع کر سکتے ہیں۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/EjOJW

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.