Home / اہم ترین / اٹلی کے تاریخی شہر وینس میں پہلی مسجد کا افتتاح

اٹلی کے تاریخی شہر وینس میں پہلی مسجد کا افتتاح

روم:(ہرپل نیوز؍ایجنسی)12؍جون: اٹلی کے شہر وینس کی پہلی مسجد کا افتتاح ایک تقریب میں کیا گیا جس میں اطالوی اسلامی کمیونٹی اور شہر کے اداروں کے نمائندوں نے شرکت کی۔ خبرکے مطابق مسجد کے افتتاح کا مطلب یہ ہے کہ یہ شہر یونیسکو کے عالمی ثقافتی ورثے کی جگہ ہے۔ سیاحتی اور آڑٹسٹک تاریخی نشان اب اس علاقے میں رہنے والے ہزاروں مسلمانوں کے لیے عبادت گاہ کے لیے وقف ہے۔عمارت کو مقامی کمیونٹی نے وینس اور قریبی صنعتی بندرگاہ میسترے میں مسلمانوں کی جمع کردہ زکوٰۃ کی رقم سے خریدا تھا۔

اسلامی کمیونٹی آف بولوگنا اور اٹلی کی اسلامی کمیونٹیز یونین کے صدر یاسین لافرام نے کہا کہ امید ہے کہ اب سے جب دنیا بھر سے آنے والے سیاح وینس جائیں گے تو وہ نہ صرف شہر بلکہ وینس کی مسجد کا پوسٹ کارڈ بھی گھر لے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ ہمیں اس سائٹ پر فخر ہے کیونکہ یہ ہمارے انضمام کا مزید ثبوت ہے۔

روبرٹو برٹن اور نینڈینو کیپیولا نے تقریب میں کیتھولک آرچڈیویز کی نمائندگی کی۔ متعدد میونسپل کونسلرز اور مقامی سیاست دان بھی اس تقریب میں شریک ہوئے۔اسلامی کمیونٹی آف بولوگنا اور اٹلی کی اسلامی کمیونٹیز یونین کے صدر یاسین لافرام نے کہا کہ وینس کی یہ مسجد اطالوی آئین کی بدولت ہر کسی کے لیے کھلی ہے جو ہر شہری کو اجازت دیتا ہے کہ وہ جب چاہے اور جہاں چاہے مسجد میں عبادت کرے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اٹلی میں رہنے والے تمام مسلمان ایک ایسا ملک بنانے میں مدد کرنا چاہتے ہیں جہاں سب کا احترام کیا جائے اور وہ مشترکہ بھلائی کے لیے کام کریں۔وینس اسلامک کمیونٹی کے رہنما صدمیر الیوسکی نے کہا کہ نئی مسجد کا بند جگہ صرف مسلمانوں کے لیے کھلا ہونے کا کوئی منصوبہ نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک کثیر الثقافتی شہر میں کھولی جانے والی یہ مسجد ہر روز دنیا بھر سے آنے والے لوگوں کو بہت سی سرگرمیوں کو زندگی بخشے گی جہاں سب کا خیر مقدم کیا جائے گا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/LUWJq

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.