Home / اہم ترین / بھٹکل تحصیلدار دفتر کے روبروبھوک ہڑتال کے ذریعہ مظاہرہ ۔کرناٹک میں این پی آر کو رد کرنےکے مطالبہ میں شدت

بھٹکل تحصیلدار دفتر کے روبروبھوک ہڑتال کے ذریعہ مظاہرہ ۔کرناٹک میں این پی آر کو رد کرنےکے مطالبہ میں شدت

بھٹکل(ہرپل نیوز)12،مارچ:کرناٹک کے بھٹکل میں آج لوگوں نے این پی آر کے خلاف ایک دن کی بھوک ہڑتال کر کے تحصیلدار دفتر کے روبرو دھرنا دیا اور ریاستی حکومت سے این پی آر پر عمل آوری فورا روک دینے کا مطالبہ کیا ۔ صبح گیارہ بجے سے شام پانچ بجے تک تحصیلدار دفتر کے روبرودھرنا دیتے ہوئےناراض احتجاجیوں نے شہریت ترمیمی قانون کی سختی کے ساتھ مخالفت کی اورعہد کیا کہ وہ کسی بھی حال میں این پی آر کے لئے معلومات فراہم نہیں کریں گے۔دھرنا مظاہرے میں بھٹکل کے مختلف اداروں کے عمائدین نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔ مظاہرین نے دستوری حقوق کے تحفظ کی مانگ کرتے ہوئے این پی روک دینے کا مطالبہ کیا ۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر دستور مخالف قوانین واپس نہیں لیے گئے تو آئندہ مزید احتجاج ہوں گے۔
بھٹکل تحصیلدار کی معرفت وزیراعلی کرناٹک کے نام پیش کئے گئے میمورنڈم کے مطابق 15اپریل 2020سے ریاست بھر میں شروع ہونے والی مردم شماری کے تحت گھروں کی گنتی کی حد تک قابل اعتراض نہیں ہے لیکن مردم شماری کے نام پر این پی آر کی جانکاری جمع کرنے کی کوشش نہیں کی جانی چاہئے ۔ میمورنڈم میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ کرناٹک میں آسام جیسی صورتحال پیدا ہونے نہ دیا جائے ۔ میمورنڈم میں خدشہ ظاہر کیا گیا ہے کہ ایسے قوا نین کےذریعہ ریاست کے عوام کی بھاری اکثریت کو شدید مشلات کا سامنا کرنا پڑے گا ۔
خیال رہے کہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کرناٹک ،اور دستور بچاؤ کمیٹی سمیت ’’ We The People Of India،کےزیر اہتمام آج ریاست کے مختلف مقامات پر بھوک ہڑتال کرتےہوئے دھرنا دیا گیا ہے۔ایک انداز ہ کے مطابق آج بھٹکل کے دھرنا میں سو سے زائد لوگوں نےدن بھر بھوکے رہ کر شرکت کی اور شام کو پانی پی کر بھوک ہڑتال ختم کی ۔ شام کو تحصیلدار نے یادداشت وصول کرتے ہوئے یقین دلایا کہ ان کی آوازوہ ارباب اقتدار تک ضرور پہنچائیں گے ۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/ABNNi

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.