Home / اہم ترین / بھٹکل سمیت کرناٹک کے ساحلی اضلاع میں منائی گئی عید ۔جانوروں کو ذبح کرنے کے ساتھ اپنی نفسانی خواہشات پر بھی چلائیں چھری ۔ قیادت پر بھروسہ موجودہ دور کی سب سے اہم ضرورت : بھٹکل میں مختلف مساجد کے خطباء و ائمہ کی جانب سے نماز عید کے بعد دیا گیا پیغام

بھٹکل سمیت کرناٹک کے ساحلی اضلاع میں منائی گئی عید ۔جانوروں کو ذبح کرنے کے ساتھ اپنی نفسانی خواہشات پر بھی چلائیں چھری ۔ قیادت پر بھروسہ موجودہ دور کی سب سے اہم ضرورت : بھٹکل میں مختلف مساجد کے خطباء و ائمہ کی جانب سے نماز عید کے بعد دیا گیا پیغام

بھٹکل (ہرپل نیوز)31 جولائی۔بھٹکل، کنداپور، اڈپی، مینگلور اور دیگر ساحلی علاقوں سمیت ریاست کیرالہ میں عید الاضحیٰ مذہبی عقیدت واحترام کے ساتھ منائی گئی ۔کرناٹک حکومت نے عیدگاہوں میں نمازکی اجازت نہیں دی تھی تاہم بھٹکل اور ساحلی کرناٹکامیں موسلا دھار بارش کے امکانات کے پیش نظر عید گاہ انتظام کمیٹی نے پہلے ہی مساجد میں نماز ادا کئے جانے کا اعلان کیا تھا جس کے باعث تمام جمعہ مساجد میں نماز ادا کی گئی۔ بھٹکل میں آج صبح ہی سے جاری مسلسل بارش کی وجہ سے نماز عید کے لئے جانے والوں کو کافی دقتوں کا سامناکرنا پڑا ۔ اس بار 15سے زائد جامع مساجد میں سماجی فاصلہ برقرار رکھنے کی سرکاری ہدایت اور ماسک کے استعمال کے لزوم کے ساتھ نماز عید ادا کی گئی۔
جامع مسجدبھٹکل میں مولانا عبدالعلیم خطیب ندوی، خلیفہ جامع مسجد میں مولانا خواجہ معین الدین اکرمی مدنی، نوائط کالونی تنظیم جمعہ مسجد میں مولانا انصار خطیب مدنی، مخدوم کالونی مخدومیہ جمعہ مسجد میں مولانا نعمت اللہ عسکری ندوی اور مدینہ کالونی مدینہ جمعہ مسجد میں مولانا ابوبکر صدیق خطیب ندوی نے دوگانہ عید کی امامت کی جبکہ حمزہ جمعہ مسجد میں مولانا اقبال نائطے ندوی اور مسجد احمد سعید میں مولانا جعفر فقی بھاؤندوی نے عید کی نماز پڑھائی۔
مختلف مساجد کے ائمہ نے اپنے خطبہ عید میں قربانی کی حقیقت ، سیرت ابراہیمی کے روشن نقوش وغیرہ پر اپنے خیالات کا اظہار کیا ۔ علمائے کرام نے موجودہ دور میں مسلمانوں میں پائی جانے والی عملی بے احتیاطی پر شدید افسوس کا اظہا رکیا اورمسلمانوں میں پائی جانے والی غیر اسلامی فکر ، غیر اسلامی تہذیب پر نوجوانوں کی فدائیت اور مغربی کلچر پر مرمٹنے جیسی نفسانی خواہشات کی قربانی پر زور دیا ۔ علمائے کرام نے اپنے پیغام میں آپسی اتحاد کو کمزور کرنے والی تمام عادتوں سے باز رہنے کی تاکید کی ۔ علمائے کرام نے قیادت پر بھروسہ کرنے اور قائدین کو عوام کی باتوں اور تنقیدوں سے بے پروا ہو کر کام کرنے کی ضرورت پر زور دیا ۔ یا درہے کہ گزشتہ دنوں شہر میں عوامی خدمت کرنے والے بعض افراد کے متعلق افواہوں سے بدمزگی پیدا ہوجانے کے بعد ا یسے بیانات پر سنجیدگی سے غور کرنے کی ضرورت بڑھ جاتی ہے ۔ خطباء حضرات نے اپنی گفتگو میں اس بات پربھی زور دیا کہ ہم اللہ کے حضور جانوروں کی قربانی اللہ کو راضی کرنے کے لئے دیتے ہیں، ہم کسی کو تکلیف دینے کے لئے جانور ذبح نہیں کرتے، اسی لئے مسلمانوں سے بار بار تاکید کی جاتی ہے کہ وہ دکھاوے کے لئے قربانی نہیں کریں، اللہ اور اس کے رسول کے بتائے ہوئے طریقے پر قربانی کریں۔
واضح رہے کہ آج جمعہ کو خلیجی ممالک، متحدہ عرب امارات، سعودی عرب، بحرین، قطر، امریکہ، ترکی اور یورپ کے کئی ملکوں کے ساتھ ساتھ افغانستان، مصر، کویت، اردن، ایران، مصر اور ملائیشیا میں بھی عید الاضحیٰ منائی گئی ۔کورونا کے ممکنہ خطرات کے پیش نظر مسجد الحرام ، مسجد نبوی ﷺ سمیت مختلف مساجد میں نمازِ عید کے محتاط اجتماعات منعقد کئے گئے۔ حجاج سمیت دیگر لوگوں کی خاصی تعداد نے دوگانہ عیدادا کی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/1vZYB

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.