Home / اہم ترین / جامعہ اسلامیہ بھٹکل میں خوبصورت تمثیلی مشاعرہ۔مشاعرے ذہنی عیاشی کاسامان نہیں۔تہذیبی روایتوں کے امین ۔مقررین کااظہارخیال

جامعہ اسلامیہ بھٹکل میں خوبصورت تمثیلی مشاعرہ۔مشاعرے ذہنی عیاشی کاسامان نہیں۔تہذیبی روایتوں کے امین ۔مقررین کااظہارخیال

بھٹکل ( ہرپل نیوز، پریس ریلیز)22فروری :مشاعرے زبان و ادب کو فروغ دینے کا اہم ذریعہ ہوتے ہیں۔مشاعروں سے ہماری ثقافت وابستہ ہے، یہ ہماری تہذیبی روایتوں کے امین و محافظ ہوتے ہیں، جامعہ اسلامیہ بھٹکل میں اللجنة العربیہ کے زیر اہتمام منعقد ہونے والے تمثیلی مشاعرے اپنے تاثرات کے دوران استاد جامعہ مولانا سمعان خلیفہ ندوی نے اس حقیقت کا اظہارکیا۔گزشتہ روز جامعہ اسلامیہ بھٹکل میں ہونے والے تمثیلی مشاعرے میں طلبہ نے برصغیر کے ان شعراء کی تمثیل پیش کی جنھوں نے معاشرے میں انقلاب اور آزادی کی نئی روح پھونک دی اور پھر بعد کے دور میں ان میں سے اکثر انقلابی شعراء کی فہرست میں شمار ہوئے۔
مشاعرے میں عامر عثمانیؒ،حفیظ میرٹھیؒ اور ابوالمجاہد زاہدؒ ، اعجاز رحمانیؒ جیسے تحریکی شعراء کے ساتھ ، حفیظ جالندهری اورفطرت بھٹکلی مرحوم جیسے اسلامی شعراء نے

کے رنگ ڈھنگ میں طلبہ نے اپنے فن کا مظاہرہ کرتے ہوئے ان کا کلام پیش کیا۔

طلبہ نےشہنشاہ تغزل حضرت جگر مراد آبادی، فیض احمد فیض،خمار بارہ بنکوی،حبیب جالب،جون ایلیا ، بشیر بدر اور راحت اندوری پھر بادشاہ ظرافت دلاور فگار کا کلام بھی اپنے مخصوص لب و لہجے میں سنا کر محفل مشاعرہ کو پرلطف کر دیا ۔مشاعرے کے آخر میں مہتمم جامعہ اسلامیہ مولانا مقبول احمد کوبٹے ندوی نے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے تمام شعراء کی بھرپور ہمت افزائی کی ۔ مہتمم جامعہ نے کہاکہ جامعہ میں اس سے پہلےبھی تمثیلی مشاعرے ہوئے ہیں اورجامعہ نے ہمیشہ شعرو ادب کی ترویج میں اہم رول ادا کیا ہے۔اس کا مقصد صرف ذہنی عیاشی کا سامان مہیا کرنا نہیں ہے بلکہ مختلف شعراء کو سن کر ان کی تہذیب ماحول اور اس کے تاریخی پس منظر کو جاننے کی کوشش کرنا ہے۔مشاعرے میں مولانا نے ترنم سےپڑھنے والوں کو خصوصی طور پر نصیحت کی کہ وہ اس نعمت کی قدر کریں اورجامعہ سے فراغت کے بعد بھی لب و لہجے اور ساز و آہنگ کا یہ سفر جاری رکھیں۔جامعہ اسلامیہ بھٹکل کے علاقات عامہ سے جاری رپورٹ کے مطابق عبدالحمید اسید نے نظامت کی ۔  اس کامیاب مشاعرے میں جامعہ کے اساتذہ و طلبہ کے علاوہ دیگر مہمانان بھی تشریف فرما تھے۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/g5KAJ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.