Home / اہم ترین / جموں وکشمیرمیں 2 پولنگ بوتھوں کو ملیٹنٹوں نے بنایا نشانہ۔ دیکھیں ویڈیو

جموں وکشمیرمیں 2 پولنگ بوتھوں کو ملیٹنٹوں نے بنایا نشانہ۔ دیکھیں ویڈیو

جموں وکشمیر (یجنسی )06مئی جموں وکشمیر کے ضلع پلوامہ میں ملیٹینٹوں نے ایک پولنگ بوتھ پرگرینیڈ حملہ کیاہے۔ تاہم اس حملہ میں کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔پلوامہ سے نیوز 18اردو نمائندہ کی جانب سے ملی اطلاعات کے مطابق پارلیمانی حلقہ اننت ناگ میں پولنگ کے دوران رہامو پلوامہ پولنگ بوتھ کے باہر پر اسرار دھماکہ ہوا۔ تاہم اس دھماکہ میں کوئی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ہے۔ وہیں ایک اوردوسرے واقعہ میں بٹہ نورترال کے ایک پولنگ بوتھ پرپیٹرول بم پھینکا گیا۔ تاہم اس حملہ میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ہے۔

سیکورٹی لحاظ سے حساس مانی جانے والی ریاست جموں وکشمیر میں عام انتخابات کے پانچویں مرحلے کے تحت پیر کی صبح سات بجے اننت ناگ اور لداخ پارلیمانی حلقوں میں پولنگ کا آغاز ہوگیا۔ جہاں صوبہ لداخ کے دو اضلاع پر مشتمل لداخ پارلیمانی حلقے میں پولنگ مراکز پر رائے دہندگان کی لمبی لمبی قطاریں لگ گئی ہیں، وہیں حساس ترین اننت ناگ پارلیمانی حلقے کے پلوامہ اور شوپیاں اضلاع میں بیشتر پولنگ مراکز پر کوئی گہما گہمی نظرنہیں آرہی ہے۔اطلاعات کے مطابق پلوامہ اور شوپیاں کے بیشتر علاقوں میں پولنگ مراکز پر صرف سیکورٹی فورسز اور انتخابی عملہ کے اہلکار نظر آرہے ہیں۔

حساس ترین اننت ناگ پارلیمانی حلقے کے دونوں پولنگ والے اضلاع میں سیکورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔ انتظامیہ کے لئے ان اضلاع میں تشدد سے مبرا انتخابات کرانا سب سے بڑا چیلنج ہے۔سیکورٹی ذرائع نے بتایا کہ ہر ایک پولنگ مرکز پر معقول تعداد میں فورسز اہلکار تعینات کئے گئے ہیں۔ انہوں نے بتایا 'فورسز اہلکاروں کو امن وقانون کی صورتحال سے نمٹنے کے دوران حد درجہ صبر وتحمل سے کام لینے کے لئے کہا گیا ہے'۔

الیکشن کمیشن کے مطابق ریاست میں آج پارلیمانی انتخابات کے آخری مرحلے کے تحت 6.97 لاکھ رائے دہندگان اپنے حق رائے دہی کا استعمال کریں گے۔آخری مرحلے میں لداخ پارلیمانی حلقہ اور اننت ناگ پارلیمانی حلقے کے پلوامہ و شوپیاں اضلاع میں لگ بھگ 697,148 رائے دہندگان اپنے ووٹ کا استعمال کریں گے۔ ان میں 357,879 مرد ، 335,799 خواتین، 3,456 سروس ووٹر ( 3401مرد اور 55خواتین) کے علاوہ 4 خواجہ سرا شامل ہیں۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/X8pW3

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.