Home / اہم ترین / سونیاگاندھی سے اشوک گہلوت نے مانگی معافی،الیکشن نہ لڑنے کا اعلان

سونیاگاندھی سے اشوک گہلوت نے مانگی معافی،الیکشن نہ لڑنے کا اعلان

نئی دہلی:(ہرپل نیوز؍ایجنسی)29؍ستمبر: راجستھان کے وزیر اعلی اشوک گہلوت نے کہا ہے کہ وہ کانگریس صدر کا انتخاب نہیں لڑنے والے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ انہیں ایسے ماحول میں الیکشن لڑنا اچھا نہیں لگتا اور وہ اپنے فیصلے کو اخلاقی طور پر درست سمجھتے ہیں۔

راجستھان کے وزیر اعلیٰ کے عہدے پر برقرار رہنے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ سونیا گاندھی کو کرنا ہے۔ اشوک گہلوت نے آج سونیا گاندھی سے ملاقات کی تھی۔

اشوک گہلوت کا کہنا ہے کہ انہوں نے راہل گاندھی سے کوچی میں ملاقات کی۔ ان سے کانگریس صدر کے لیے انتخاب لڑنے کی بھی درخواست کی گئی تھی۔

لیکن جب وہ نہیں مانے تو میں نے کہا کہ میں الیکشن لڑوں گا لیکن اب راجستھان کے سیاسی ڈرامے کے بعد میں نے الیکشن نہ لڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سونیا گاندھی سے ملاقات کے بعد اشوک گہلوت کا کہنا ہے کہ ایک لائن کی تجویز ہماری روایت ہے، لیکن انہیں ایسا کرنے کی بھی اجازت نہیں دی گئی۔ ایسی صورت حال پیدا کی گئی کہ ایسا نہ ہو سکے، یہ میری اخلاقی ذمہ داری تھی لیکن وزیر اعلیٰ رہنے کے بعد بھی وہ ایسا نہیں کر سکے۔اشوک گہلوت نے کہا ہے کہ وہ کانگریس صدر کا انتخاب نہیں لڑیں گے۔ ان کا کہنا ہے کہ انہیں ایسے ماحول میں الیکشن لڑنا اچھا نہیں لگتا اور وہ اپنے فیصلے کو اخلاقی طور پر درست سمجھتے ہیں۔ راجستھان کے وزیر اعلیٰ کے عہدے پر برقرار رہنے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ سونیا گاندھی کو کرنا ہے۔ اشوک گہلوت نے آج سونیا گاندھی سے ملاقات کی۔

اشوک گہلوت کا کہنا ہے کہ انہوں نے راہل گاندھی سے کوچی میں ملاقات کی۔ ان سے کانگریس صدر کے لیے انتخاب لڑنے کی بھی درخواست کی تھی۔ لیکن جب وہ نہیں مانے تو میں نے کہا کہ میں الیکشن لڑوں گا لیکن اب راجستھان کے سیاسی ڈرامے کے بعد میں نے الیکشن نہ لڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سونیا گاندھی سے ملاقات کے بعد اشوک گہلوت کا کہنا ہے کہ ایک لائن کی تجویز ہماری روایت ہےلیکن انہیں ایسا کرنے کی بھی اجازت نہیں دی گئی۔ ایسی صورت حال پیدا کی گئی کہ ایسا نہ ہو سکے، یہ میری اخلاقی ذمہ داری تھی۔ لیکن وزیر اعلیٰ رہنے کے بعد بھی وہ ایسا نہیں کر سکے۔

اشوک گہلوت نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میں نے کانگریس کی عبوری صدر سونیا گاندھی سے بات کی۔ دو دن پہلے جو کچھ ہوا اس نے ہمیں ہلا کر رکھ دیا۔ اس نے یہ پیغام دیا کہ یہ سب اس لیے ہوا کیونکہ میں وزیراعلیٰ بننا چاہتا تھا۔ میں نے اس سے معافی مانگ لی ہے۔

اسی دوران راجستھان میں وزیر اعلیٰ کے سوال پر صحافیوں نے اشوک گہلوت سے سوال پوچھا کہ کیا وہ وزیر اعلیٰ رہیں گے یا نہیں؟ اس سوال کے جواب میں اشوک گہلوت نے کہا کہ میں یہ فیصلہ نہیں کروں گا، اس کا فیصلہ کانگریس صدر سونیا گاندھی کریں گی۔

دگ وجے سنگھ نے ششی تھرور سے ملاقات کی۔

دوسری جانب ڈگ وجے سنگھ نے کانگریس صدر کے عہدے کے لیے نامزدگی فارم لے لیا ہے اور وہ کل اپنا پرچہ نامزدگی داخل کریں گے۔ بتا دیں کہ ششی تھرور نے بھی نامزدگی فارم لے لیا ہے۔ دوسری جانب دگ وجے سنگھ نے نامزدگی فارم لینے کے بعد ششی تھرور سے ان کے گھر پر ملاقات کی۔ ششی تھرور نے اس ملاقات کے بارے میں ٹویٹ کیا۔

ششی تھرور نے ٹویٹ کیا اور لکھا، ’’آج دوپہر ڈگ وجے سنگھ ان سے ملنے آئے تھے۔ میں پارٹی صدر کے عہدے کے لیے ان کی امیدواری کا خیرمقدم کرتا ہوں۔ ہم دونوں اس بات پر متفق ہیں کہ ہماری لڑائی حریفوں کے درمیان نہیں بلکہ اتحادیوں کے درمیان دوستانہ ہے۔ ہم دونوں صرف یہ چاہتے ہیں کہ جو بھی جیتے گا، جیت کانگریس کی ہوگی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/YBgKy

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.