Home / اہم ترین / سپریم کورٹ نے گھر گھر ویکسی نیشن کے مطالبے والی درخواست پر غور کرنے سے انکار کر دیا

سپریم کورٹ نے گھر گھر ویکسی نیشن کے مطالبے والی درخواست پر غور کرنے سے انکار کر دیا

نئی دہلی: (ہرپل نیوز؍ایجنسی)9؍ستمبر:گھر گھر جاکر کوویڈ ویکسی نیشن کرنے کی مطالبہ والی درخواست پر سپریم کورٹ نے غور کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ مرکزی حکومت کی انتظامی ضروریات اور پالیسی فیصلوں کو مدنظر رکھتے ہوئے ایسی عمومی ہدایات جاری نہیں کی جا سکتی ہیں۔ جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ کی بنچ نے کہا کہ ایسی درخواستیں دائر کرتے وقت اپنی صوابدید کا استعمال نہیں کرتے۔

بمبئی ہائی کورٹ نے ایک حکم جاری کیا تھا کہ جو لوگ نہیں جاسکتے ان کے گھرجاکر ویکسین دی جائے ، لیکن ملک کے مختلف مقامات پر صورتحال مختلف ہے۔سپریم کورٹ نے کہا کہ لداخ ، کیرالا اور یوپی دیہی اور شہری علاقوں میں صورتحال مختلف ہے۔ آپ کو ملک کے تنوع کو اس طرح دیکھنا چاہیے پورے ملک کو ایک مشترکہ حکم میں نہیں لایاجا سکتا۔ فی الحال ایک پالیسی کے تحت 50 فیصد لوگوں نے کم از کم کورونا کی ایک خوراک لی ہے۔

درخواست گزار یوتھ بار ایسوسی ایشن اس معاملے میں مرکزی حکومت سے رجوع کر سکتا ہے۔ ایک دیگرکیس میں بھی سپریم کورٹ نے ان لوگوں کے خاندانوں کے لیے معاوضے کا مطالبہ کرنے والی ایک درخواست کی سماعت روک دی ہے جو کورونا کے دوران آکسیجن ، ادویات وغیرہ کی کمی کی وجہ سے مر گئے تھے۔ سپریم کورٹ نے پہلے ہی اس معاملے میں فیصلہ دے چکا ہے۔ درخواست گزار مرکز کو تجویز دیں۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/aURXE

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.