Home / اہم ترین / سیاست میں اتریں پرینکا گاندھی. راہل نے کہا-ہمیشہ فرنٹ فٹ پرکھیلیں گے ہم. عظیم اتحاد میں بھی پرینکاادا کریں گی اہم رول

سیاست میں اتریں پرینکا گاندھی. راہل نے کہا-ہمیشہ فرنٹ فٹ پرکھیلیں گے ہم. عظیم اتحاد میں بھی پرینکاادا کریں گی اہم رول

نئی دہلی( ہرپل نیوز ،ایجنسی) 23جنوری:ساست میں قدم رکھد دیا انگریس صدر راہل گاندھی نے پرینکا گاندھی کو مشرقی اترپردیش کی کمان سونپی ہے۔ مانا جا رہا ہے کہ یہ فیصلہ آئندہ لوک سبھا انتخابات اور پرینکا گاندھی کی مقبولیت کے مد نظر لیا گیا ہے۔ پرینکا فروری کے پہلے ہفتہ میں کام کاج سنبھالیں گی۔اس سلسلے میں پارٹی کے رہنما اور راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت کی جانب سے پریس ریلیز جاری کی گئی ہے جس میں لکھا ہے ' کانگریس صدر نے پرینکا گاندھی واڈرا کو مشرقی اترپردیش کی جنرل سکریٹری کے طور پر مقرر کیا ہے۔ وہ فروری کے پہلے ہفتے میں عہدہ سنبھالیں گی'۔کانگریس کی پریس ریلیز کے مطابق ، سینئر کانگریس لیڈر کے سی وینو گوپال کو پارٹی جنرل سکریٹری بنایا گیا ہے۔ وہ کرناٹک کے انچارج بنے رہیں گے۔ وہیں جیوترادتیہ سندھیا کو مغربی یوپی کی کمان سونپی گئی ہے، وہیں غلام نبی آزاد سے یوپی کاچارج واپس لے لیا گیا ہے۔ انہیں فوری طور پر ہریانہ کا چارج دیا گیا ہے۔کانگریس کے سینئر لیڈر موتی لال وورا نے کہا " راہل گاندھی جو بھی کہتے ہیں وہ کرکے دکھاتے ہیں۔ پرینکا گاندھی کی تقرری اس بات کا اشارہ ہے کہ کانگریس کا مستقبل روشن ہے'۔

راہل گاندھی نے کہا- ہم ہمیشہ فرنٹ فٹ پرکھیلیں گے:کانگریس صدرراہل گاندھی نے بدھ کوپرینکا گاندھی واڈرا کو مشرقی اترپردیش کا جنرل سکریٹری نامزد کیا گیا ہے۔ اس کے بعد سے پرینکا گاندھی سیاست میں باضابطہ طورپرقدم رکھ چکی ہیں۔ پرینکا اس سے قبل یوپی اے کی چیئرپرسن سونیا گاندھی اورکانگریس صدر راہل گاندھی کی پارلیمانی سیٹ امیٹھی تک ہی محدود تھیں۔ پرینکا کونئی ذمہ داری دیئے جانے پرراہل گاندھی نے بھی تبصرہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ ہم ہمیشہ فرنٹ فٹ پرکھیلیں گے۔ راہل نے کہا کہ اترپردیش کی سیاست کو بدلنے کے لئے ہمیں نوجوانوں کی ضرورت تھی۔ پرینکا بہت مضبوط لیڈرہے۔ انہوں نے کہا کہ اترپردیش میں ہمارے لئے یہ بڑا قدم ہے۔ اس سے یوپی میں مثبت تبدیلی آئے گی۔ میں مایاوتی اوراکھلیش یادو کا احترام کرتا ہوں، ہم ہرسطح پران کا تعاون کریں گے۔ ہم بی جے پی کے خلاف ہیں۔

راہل گاندھی نے کہا کہ ہم کسی بھی ریاست میں بیک فٹ پرنہیں رہیں گے۔ آپ نے دیکھا کہ ہم نے گجرات میں کیا کیا۔ یہ قدم اترپردیش میں کانگریس کی نئی حکمت عملی ہے۔ پرینکا کے الیکشن لڑنے کے سوال پرراہل نے کہا کہ یہ ان پرمنحصرکرتا ہے۔ میں جانتا ہوں کہ بی جے پی اس فیصلے سے خوفزدہ ہے۔اس کے ساتھ ہی پرینکا گاندھی کی تقرری پربی جے پی نے بھی تبصرہ کیا ہے۔ بی جے پی ترجمان سنبت پاترا نے بدھ کونامہ نگاروں سے کہا کہ 'کانگریس کے خاندان  اول سے ایک تاجپوشی ہوئی ہے۔ یہ بہت فطری ہے۔ کانگریس پارٹی جوخود کوانڈین نیشنل کانگریس کہتی ہے، دراصل یہ ایک خاندان کی پارٹی ہے، اس میں کوئی شک نہیں ہے'سنبت پاترا نے کہا 'ایک بات آج طے ہوئی ہے، ہم مبارکباد دینا چاہتے ہیں کانگریس پارٹی کو عوامی طورپرجس طرح سے اپنے موجودہ صدرراہل گاندھی ان کی ناکامی کا اعلان کردیا ہے۔ راہل گاندھی اب ناکام ہوگئے ہیں، اس لئے انہیں پرینکا کی بیساکھی کی ضرورت ہے'۔پرینکا گاندھی کی تقرری پرکانگریس کے سینئرلیڈرموتی لال ووہرا نےکہا کہ 'پرینکا گاندھی کوجوذمہ داری دی گئی ہے، وہ بے حد اہم ہے۔ اس کا اثرصرف اترپردیش پرہی نہیں ہوگا، بلکہ اترپردیش کے دیگرعلاقوں پربھی پڑے گا'۔ پارٹی لیڈرراجیوشکلا نےکہا 'پرینکا کو سیاست میں لاکرراہل جی نے بڑا پیغام دیا ہے۔ اس سے پورے ملک میں کانگریس کوفائدہ ہوگا'۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ پرینکا کے نام کا اعلان ہونے سے ہی بی جے پی گھبرا گئی ہے۔  پرینکا کے نام کا اعلان ہونے کے ساتھ ہی کانگریس ہیڈ کوارٹرکے باہرکارکنان کی بھیڑجمع ہوگئی۔ کارکنان نے 'پرینکا گاندھی آئی ہے، نئی روشنی لائی ہے' کے نعرے لگائے۔

پرینکا گاندھی عظیم اتحاد میں ادا کریں گی اہم کردار: لوک سبھا الیکشن کے لئے اترپردیش میں بننے والےعظیم اتحاد کے لئے اسٹیج تیارہوچکا ہے۔ سماجوادی پارٹی – بہوجن سماج پارٹی کا الیکشن کے لئے اتحاد ہوچکا ہے تاہم اس اتحاد میں پرینکا گاندھی کا بھی اہم رول ہوگا۔ عظیم اتحاد میں سماجوادی پارٹی – بہوجن سماج پارٹی جہاں سامنے آکربی جے پی کا مقابلہ کریں گی۔ وہیں کانگریس پردے کے پیچھے رہتے ہوئے اتحاد کا دھرم نبھائے گی۔

ذرائع کے مطابق ایس پی- بی ایس پی کی شرطوں کے مطابق کانگریس عظیم اتحاد میں کھل کرسامنے نہیں آئے گی۔ کانگریس کوسامنے لاکرایس پی- بی ایس پی دونوں بی جے پی کو حملہ آورہونے کا کوئی موقع نہیں دینا چاہتی ہیں۔ سابق وزیراعلیٰ اکھلیش یادو کےایک بے حد قریبی اورنیوزچینل پرہمیشہ سائے کی طرح رہنے والے سماجوادی پارٹی کےایک قدآور لیڈرکی مانیں توکانگریس کی طرف سےعظیم اتحاد کوعملی جامہ پرینکا گاندھی پہنائیں گی۔ وہیں ذرائع کا کہنا ہے کہ عظیم اتحاد کی بات چیت کےلئے پرینکا گاندھی کے سفیرسلمان خورشید ہوں گے۔لوک سبھا الیکشن 2019 میں شکست سے بچنے کے لئے ایس پی – بی ایس پی نے سیٹوں کی تقسیم کا ایک خاص پلان تیارکیا ہے۔ ذرائع کی مانیں تویوپی میں کانگریس اپنےامیدواروہیں اتارے گی، جہاں اسے جیت کا پختہ یقین ہوگا۔ مطلب ایسےعلاقے جہاں کانگریس پہلے بھی جیت حاصل کرتی رہی ہے۔

وہیں ایس پی – بی ایس پی اتحاد کے سامنے کانگریس اپنا امیدواربی جے پی کے ایسےلیڈرکو بنائے گی، جس کا ٹکٹ بی جے پی نے کاٹ دیا ہواوروہ بی جے پی سے ناراض ہو۔ ایس پی – بی ایس پی نے یہ حکمت عملی بی جے پی کے ووٹوں کی تقسیم کے لئے تیارکیا ہے۔ دوسری طرف کہا جارہا ہے کہ اتحاد میں راشٹریہ لوک دل (آرایل ڈی) بھی شامل رہے گی۔ آرایل ڈی کو یوپی میں تین سے چارسیٹیں دی جاسکتی ہیں۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/URjYv

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.