Home / اہم ترین / لائیو اسٹریمنگ کو لے کر فیس بک کی نئی پالیسی، نہیں ماننے پر بند ہو جائے گا اکاؤنٹ

لائیو اسٹریمنگ کو لے کر فیس بک کی نئی پالیسی، نہیں ماننے پر بند ہو جائے گا اکاؤنٹ

( ایجنسی)16مئی فیس بک نے ایک بڑا فیصلہ لیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر کوئی لائیو اسٹریمنگ کا استعمال تشدد کے لئے کرتا ہے تو اس صارف کے اکاؤنٹ پر پابندی لگا دی جائے گی۔ مطلب صاف ہے کہ اگر کسی نے اپنے فیس بک اکاؤنٹ سے تشدد جیسے ویڈیو کی لائیو اسٹریمنگ کی ہے تب وہ آگے اس فیچر کا استعمال نہیں کر پائے گا۔

فیس بک نے نیوزی لینڈ کے کرائسٹ چرچ میں ہوئے دہشت گردانہ حملے کی لائیو اسٹریمنگ کے بعد یہ بڑا قدم اٹھایا ہے۔ کمپنی کی وی پی گائے روسین نے بتایا کہ جن لوگوں نے طے شدہ ضوابط کی خلاف ورزی کی ہے ان پر فیس بک کے لائیو اسٹریمنگ فیچر کے استعمال کرنے کو لے کر پابندی لگائی جائے گی۔
کیا ہے نئی پالیسی

گائے روسین کا کہنا ہے کہ نیوزی لینڈ کے کرائسٹ چرچ میں دہشت گردانہ حملے کو فیس بک پر لائیو اسٹریمنگ کے ساتھ چلایا گیا۔ اس ویڈیو کو کئی صارفین نے شئیر بھی کیا۔ اس لئے اب فیس بک پر نفرت کو روکنے کے لئے کمپنی ون اسٹرائک پالیسی لا رہی ہے۔ اس پالیسی کے نفاذ کے بعد جو صارف اگر ضوابط کی خلاف ورزی کرے گا تو اس کے اکاؤنٹ پر روک لگا دی جائے گی یا پھر اس کے کئی فیچرس بند کر دئیے جائیں گے۔

کوئی صارف کسی دہشت گرد تنظیم کے بیان کا لنک شئیر کرتا ہے تب بھی یہ پالیسی کے خلاف ہو گا۔ ایسی صورت میں اس کے اکاؤنٹ پر روک لگا دی جائے گی۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/cN68a

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.