Home / اہم ترین / لکھیم پور کھیری کیس: کسان مورچہ کا18 تاریخ کو ریل روکو آندولن ، لکھنؤ میں ہوگی مہا پنچایت

لکھیم پور کھیری کیس: کسان مورچہ کا18 تاریخ کو ریل روکو آندولن ، لکھنؤ میں ہوگی مہا پنچایت

نئی دہلی: (ہرپل نیوز؍ایجنسی)10؍اکتوبر:لکھیم پور کھیری تشدد میں کسانوں کی موت کا معاملہ گرم ہو تاجارہا ہے۔ کسان تنظیموں کے قائدین نے لکھیم پور کھیری کیس میں آئندہ حکمت عملی کے حوالے سے پریس کانفرنس کی۔ متحدہ کسان مورچہ نے مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ اجے مشرا اور ان کے بیٹے آشیش مشرا کی گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔ اجے مشرا کو کابینہ سے ہٹانے کا بھی مطالبہ کیا۔

کسان مورچہ نے کہا کہ 12 اکتوبر کو ملک بھر سے کسان لکھیم پور کھیری پہنچیں گے۔ نیز کسان لکھنؤ میں مہا پنچایت بھی کریں گے۔یوگیندر یادو نے کہا کہ پہلے پروگرام کے تحت 12 تاریخ کو کسان اور صحافی جو شہید ہوئے ہیں ،ان کے لیے ہم لکھیم پور کے ٹکونیا میں آخری رسومات کریں گے۔ملک بھر سے کسان 12 تاریخ کو لکھیم پور پہنچیں گے۔ لکھیم پور کا واقعہ جلیانوالہ باغ سے کم نہیں ہے۔ ہم ملک کی تمام شہری تنظیموں سے درخواست کرتے ہیں کہ وہ اپنے شہروں میں موم بتی مارچ نکالیں۔ ہم پورے ملک کے شہریوں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ رات 8 بجے اپنے گھروں میں موم بتی جلائیں۔

یادو نے کہا کہ 12 تاریخ کو کسانوں کی راکھ کی لاش یاترا یوپی میں لکھیم پور سے ہی شروع ہوگی۔ کسان ہر ریاست میں کسانوں کی راکھ لے کر جائیں گے اور وسرجن کیا جائے گا۔ دسہرہ 15 اکتوبر کو ہے ، تمام کسان وزیراعظم مودی اور امت شاہ کے پتلے جلائیں گے۔ 18 کو ٹرین روکیں گے۔ 26 کو لکھنؤ میں ایک بڑی مہا پنچایت ہوگی۔کسان رہنما ڈاکٹر درشن پال نے ہفتہ کو کہا کہ اس واقعہ میں کسان شہید ہوئے ہیں اور کسان مورچہ آخری دم تک لڑے گا۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/gyDN9

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.