Home / اہم ترین / مستقبل کی تعمیر کے لئے ماضی سے رشتہ استوار رکھیں اور نوجوان اپنی صلاحیتوں کو قوم و ملت کے لئے مفید بنائیں ۔ الہلال این آر آئی فورم کے آن لائن سالانہ اجلاس سے مقررین کا خطاب

مستقبل کی تعمیر کے لئے ماضی سے رشتہ استوار رکھیں اور نوجوان اپنی صلاحیتوں کو قوم و ملت کے لئے مفید بنائیں ۔ الہلال این آر آئی فورم کے آن لائن سالانہ اجلاس سے مقررین کا خطاب

بھٹکل،دبئی (ہرپل نیوز)2اگست:جو قوم اپنےمحسنین کی خدمات کو فراموش کرتی ہے یا انہیں نظر انداز کرتے ہوئے ان کے کاموں پر انگلیاں اٹھاتی ہے تو آنے والی نسل ان کے کاموں پر ضرورا نگلی اٹھائے گی۔کسی بھی قوم کو اپنے مستقبل کی تعمیر کے لئے ماضی کو یاد رکھنا ضروری ہوجاتا ہے۔ زوم ویڈیو کانفرنسنگ کے تحت دبئی سے کنٹرول کئے گئے الہلال این آر آئی فورم کے پہلے سالانہ اجلاس میں کلیدی خطاب کرتے ہوئےدبئی میں برسر روزگار بھٹکل کے معروف عالم دین مولانا سید ہاشم نظام ندوی نے ان خیالات کا اظہار کیا ۔ مولانا نے نوجوانوں کو وقت کا صحیح استعمال کر نے اور قوم وملت کی خدمت کے لئے مزیدکام کرنے پر زور دیا۔ موجودہ حالات میں الہلال این آر آئی فورم کی خدمات کے تناظر میں مولانا نے سیر ت رسولﷺ کے حوالے سے یقین دلایا کہ بے کسوں کی خدمت کرنے والے کسی بھی محاذ پر ناکام نہیں ہوتے ۔ اس اجلاس سے قائد قوم ایس ایم سید خلیل الرحمن ، اورخلیج کونسل کے جنرل سکریٹری محمد یونس قاضیا ، استاذ جامعہ مولانا شعیب ائیکری ندوی نے خطاب کرتے ہوئے فورم کے قیام پرخوشی کا اظہار کیا اورفورم کی خدمات کی سراہنا کرتے ہوئے شورائی نظام کے ساتھ کام کرنے کو فورم کا قابل تحسین قدم قرار دیا ۔ مقررین نے الہلال این آر آئی فورم کے ساتھ ہر قسم کے تعاون کی بھی یقین دہا نی کرائی ۔

اس پروگرام میں الہلال این آر آئی فورم کے صدر مولوی جواد احمد ندوی کوڑمکی نے فورم کے قیام کے مقاصد اجاگر کرتے ہوئے فورم کاتعارف کیا۔ ادارہ کے قیام کا مقصد بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ممبران میں باہمی ربط وتعلق پیدا کر کے خدمت خلق جذبہ کو فروغ دینا اور ملت کی فلاح وبہبودی کی فکر کرتے ہوئے مقامی افرا دکی تعلیمی ، تربیتی ، دعوتی ، ثقافتی وسماجی امور میں خدمت کے لئے نوجوانوں کو تیار کرنا اور ان کی صلاحیتوں کومفید وکارآمد بنانا ادارےکے قیام کا بنیادی مقصد ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ فورم نے گذشتہ ایک سال میں مقامی افراد کے کئی مسائل جن میں مجبور ومحتاجوں کےعلاج ومعالجہ کا بل، مستحق گھرانے کی شادی بیاہ میں تعاون اورلاک ڈاؤن میں بلا تفریق مذہب و ملت امدادی کٹس کی تقسیم ، نیزدہلی فسادات کے لئے ریلیف فنڈ کی فراہمی میں تنظیم کے ساتھ تعاون ، اورحفظِ قرآن کی سعادت پر مدرسہ کے طلبا کی ہمت افزائی جیسے کئی اہم کام میں الہلال این ار ائی فورم کی خدمات کا احاطہ کیا ۔
دو نشستوں میں منعقد اس سالانہ اجلاس کی دوسری نشست میں فورم کے جنرل سکریٹری نے سالانہ رپورٹ پیش کی جس کے بعد ممبران کو سوالات کا موقع دیا گیا ۔جلسہ کے دوران فورم کے ممبران میں امیر باشاہ شیخ و جعفر صادق کندنگوڑا نے سریلی آواز سے سامعین کو محظوظ کیا اور عرفان سدی باپا نے اپنے کلام سے بھی نوازا۔ساتھ ہی ساتھ مقامی ایسوسی ایشن کے جنرل سکریٹری روشن کندنگوڑا اور دیگر نے موقع کی مناسبت سے اپنے خیا لات کا اظہار کیا۔ اس سے پہلے حافظ مولوی سلیمان آرمار ندوی کی تلاوت کلام پاک، اور انصار پیرزادے کی نعت پاک سے اجلاس کا آغاز ہوا تھا۔ مولوی یاسین ندوی نے حاضرین کااستقبال کیا، جبکہ ایم جے آفتاب نے جامع انداز میں مہمانوں کا تعارف کیا۔ مولوی تعظیم قاضی جامعی نے اپنی خوبصورت آواز میں ترانہ الھلال  پیش کیا ۔فورم کے جنرل سکریٹری اطہر پیرزادے نے بحسن و خوبی جلسہ کی نظامت کی، فورم کے رکن شوری معلم ہاشم‌ نے شکریہ ادا کیا اورآفتاب ایم جے کی دعاپر دوسری نشست کا اختتام ہوا۔
واضح رہے کہ بھٹکل میں الہلال اسوسی ایشن کے وہ ممبران جوخلیج کے ممالک میں بر سر روزگار ہیں انہوں نے 2007میں ایک فورم قائم کیا تھا جس کے ذریعہ علاقے کے نوجوان بھٹکل کے حالات پرنظر رکھتے ہوئے یہاں کے مسائل حل کرنے میں اپنا دست ِ تعاون بڑھاتے ہیں اور پردیس میں رہ کر وطن کے مسائل کو لیکر سنجیدہ گی سے سوچتے ہیں اور وقتا فوقتاّ مفید مشوروں سے نوازتے رہتے ہیں ۔ الہلال این آر آئی فورم اور بھٹکل میں مقیم الہلال کے ممبران بہتر تال میل  کے ساتھ سماجی خدمات میں سرگرم رہتے ہیں ۔ کئی برسوں سے عید الاضحیٰ کے موقع پر جانوروں کے باقیات ٹھکانے لگانے کے لئے مجلس اصلاح و تنظیم کے تعاون سے الہلا ل اسوسی ایشن کے نوجوان اپنی خدمات پیش کرتے آئے ہیں۔ کہا جاتا ہے کہ عید کے دنوں میں ان کی یہی خدمت انہیں یاد گار بنائے گی ۔

The short URL of the present article is: http://harpal.in/4x9Mr

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے خانے پر* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.