Home / اہم ترین / مولانا سید واضح رشید حسنی ندوی کا انتقال۔ آفتاب ادب کے شخصی حالات

مولانا سید واضح رشید حسنی ندوی کا انتقال۔ آفتاب ادب کے شخصی حالات

محمد واضح رشید حسنی ندوی بن سید رشید حسنی ندوی مرحوم جدید عربی زبان و ادب کے ماہر، ناقد، صحافی اور دار العلوم ندوۃ العلماء کے معتمد تعلیم تھے۔ محمد رابع حسنی ندوی کے چھوٹے بھائی اور مجاز بیعت و ارشاد تھے۔ دار العلوم ندوۃ العلماء سے تعلیم حاصل کرنے کے بعد علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے انگریزی میں بی۔ ای۔ کیا۔ اس کے بعد آل انڈیا ریڈیو میں بحیثیت مترجم و اناؤنسر 1953ء سے 1973ء تک کام کرنے کے بعد واپس دار العلوم ندوۃ العلماء واپس آ گئے۔ متعدد دینی و علمی اداروں کے سرپرست تھے۔

ولادت و تعلیم: محمد واضح رشید حسنی ندوی بن سید رشید حسنی کی ولادت رائے بریلی میں ہوئی۔ دار العلوم ندوۃ العلماء سے تعلیم حاصل کرنے کے بعد علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے انگریزی میں بی۔ ای۔ کیا۔

تدریس و دیگر ذمہ داریاں: بی۔ اے۔ کرنے کے بعد آل انڈیا ریڈیو میں بحیثیت مترجم و اناؤنسر 1953ء سے 1973ء تک کام کیا، اس کے بعد دار العلوم ندوۃ العلماء واپس آ گئے اور بحیثیت استاد ادب عربی ان کا تقرر ہوا۔ دار العلوم ندوۃ العلماء کے کلیۃ اللغۃ العربیۃ و آدابہا کے عمید رہے پھر اس کے بعد ندوہ کے معتمد تعلیم رہے۔ اس کے علاوہ مدرسہ فلاح المسلمین، رائے بریلی کے ناظم اور دار عرفات کے نائب صدر تھے۔عربی زبان و ادب کے ماہر، ناقد نیز موجودہ دور کے فکر اسلام کے ماہرین میں سے تھے۔

تصوف و سلوک:تصوف سلوک میں محمد واضح رشید حسنی ندوی اپنے برادر اکبر محمد رابع حسنی ندوی کے مجاز و خلیفہ بھی تھے۔

تصانیف:ان کی متعدد اردو و عربی تصانیف ہیں، جن میں سے چند یہ ہیں:

اردو میںمحسن انسانیت ﷺسلطان ٹیپو شہید ایک تاریخ ساز قائد شخصیت۔مسئلۂ فلسطینندوۃ العلماء ایک رہنما تعلیمی مرکز اور تحریک اصلاح و دعوتنظام تعلیم و تربیت اندیشے، تقاضے اور حلاسلام مکمل نظام زندگی حدیث نبوی کی روشنی میں۔ عربی میںأدب الصحوة الإسلامية،الدعوة الإسلامية و مناهجها في الهند،حركة التعليم الإسلامي في الهند و تطور المنهج۔تاريخ الأدب العربي، العصر الجاهلي۔من صناعة الموت إلى صناعة القرارات۔نحو نظام عالمي جديد۔حركة رسالة الإنسانية۔الإمام أحمد بن عرفان الشهيد۔مصادر الأدب العربي۔أدب أهل القلوب۔المسحة الأدبية في كتابات الشيخ أبي الحسن على الحسني الندوي۔الشيخ أبو الحسن قائدا حكيما۔مختصر الشمائل النبوية۔أعلام الأدب العربي الحديث ۔اردو سے عربی ترجمہ۔فضائل القرآن الكريم للشيخ محمد زكريا الكاندهلوي۔فضائل الصلاة على النبي الكريم صلى الله عليه وسلم للشيخ محمد زكريا الكاندهلوي۔الدين و العلوم العقلية للشيخ عبد الباري الندوي

اعزاز: ان کی عربی زبان و ادب کی خدمات کے اعتراف میں ان کو صدر جمہوریہ ایوارڈ ملا۔

وفات: ۱۶ جنوری ۲۰۱۹ بمطابق ۹ جمادی الاول ۱۴۴۰ بدھ کے دن آپ رحمہ اللہ اس دار فانی سے کوچ کر گئےـ انا للہ و انا الیہ راجعون

The short URL of the present article is: http://harpal.in/bS4Xq

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا. ضرورت کے کھیتوں ک* نشان لگا دیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.